.

سعودی عرب کی 22 سال میں 84 ارب 70 کروڑ ڈالرز کی امداد سے 79 ممالک مستفید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شاہ سلمان انسانی امداد اور ریلیف مرکز ( کے ایس ریلیف) کے نگرانِ اعلیٰ ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ نے کہا ہے کہ گذشتہ بائیس سال کے دوران میں سعودی مملکت نے دنیا بھر میں انسانی امدادی سرگرمیوں کے لیے 84 ارب 70 کروڑ ڈالرز کی رقوم دی ہیں اور 1996ء سے 2018ء کے دوران میں اس امدادی رقم سے 79 ممالک مستفید ہوئے ہیں۔

انھوں نے یہ بات پولینڈ کے دارالحکومت وارسا میں وارسا یونیورسٹی کے زیر اہتمام منعقدہ ایک سمپوزیم میں گفتگو کرتے ہوئے بتائی ہے۔سمپوزیم میں پولینڈ میں متعیّن سعودی سفیر محمد بن حسین مدنی ، یمنی سفیر مروت المجلّی اور متعدد پولش حکام بھی شریک تھے۔

ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ نے کہا کہ سعودی عرب علاقائی اور عالمی سطح پر سکیورٹی اور استحکام کو برقرار رکھنا چاہتا ہے اور وہ بالخصوص یمن میں امن و استحکام چاہتا ہے۔اس موقع پر انھوں نے سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا تہنیتی پیغام بھی پڑھ کر سنایا ۔

انھوں نے سمپوزیم کے شرکاء کو بتایا کہ کے ایس ریلیف نے 42 ممالک کے لیے ایک ارب 90 کروڑ سے زیادہ مالیت کے 482 منصوبے مہیا کیے ہیں۔اس کے علاوہ اس وقت سعودی عرب 561911 یمنیوں ، 283449 شامیوں ، اور میانمار سے تعلق رکھنے والے 249669 روہنگیا مہاجرین کی مہمان نوازی کررہا ہے۔