.

سینٹ پیٹرزبرگ میں منعقدہ عالمی ثقافتی فورم میں شریک سعودی وفد کا خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی صدر ولادی میرپوتین نے سینٹ پیٹرز برگ میں منعقدہ بین الاقوامی کلچرل فورم میں شریک سعودی وفد کا بہ نفس نفیس خیر مقدم کیا ہے۔وفد کی قیادت سعودی وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن محمد بن فرحان کررہے تھے۔

شہزادہ بدر نے روسی صدر کے ساتھ اپنی ایک تصویر ٹویٹر پر جاری کی ہے اور لکھا ہے کہ ’’ ہم نے روس میں اپنے دوستوں کی سینٹ پیٹرز برگ میں بین الاقوامی کلچرل فورم میں شرکت کے لیے دعوت قبول کی تھی۔ یہ ثقافتی تعاون کو مضبوط بنانے اور روسی صدر ولادی میر پوتین سے ملاقات کا ایک اچھا موقع تھا‘‘۔

انھوں نے ٹویٹر پر اس فورم کی دوسری تصاویر بھی جاری کی ہیں،ان میں ان کی اطالوی وزیر ثقافت البرٹو بونیسولی سے ملاقات کی تصویر بھی شامل ہے۔ انھوں نے اس موقع پر ان سے اٹلی اور سعودی عرب کے درمیان ثقافتی تعلقات بڑھانے کے لیے مشترکہ تعاون پر بھی بات چیت کی ہے۔

اطالوی وزیر کا کہنا تھا کہ ’’سیاست میں کلچر ابلاغ کا ایک ذریعہ ہے۔حتیٰ کہ جب سنگین عالمی بحران پیدا ہوجاتے ہیں تو کلچر ہی کے ذریعے دو یا زیادہ ممالک کے درمیان ایک دوسرے سے پیغام رسانی کی جاسکتی ہے۔بعض اوقات بنیادی اقدار کو مضبوط بنانے کے لیے بھی کمیونٹیوں اور سیاست دانوں کے درمیان ابلاغ ہوتا ہے‘‘۔

سینٹ پیٹرز برگ فورم کا یہ ساتواں ایڈیشن ہے اور اس میں چودہ پویلین قائم کیے گئے ہیں۔ ان میں میوزیم ، سرکس ، تھیٹرز ، سینما ، لٹریچر ، سیاحت ، لوک ورثہ اور دوسرے پویلین شامل ہیں۔ فورم کا افتتاح جمعرات کو روس کے نائب وزیر اعظم برائے کھیل ، ثقافت اور ثقافتی ترقی اولگا گولوڈیٹس اور روس کے وزیر ثقافت ولادی میر میڈنسکی نے کیا تھا۔

واضح رہے کہ رو س کے ماہرینِ آثار قدیمہ نے حال ہی میں سعودی عرب میں پائے جانے والے تاریخی آثار کی دریافت میں خصوصی دلچسپی کا اظہار کیا ہے جبکہ اس وقت روس سعودی عرب کی وزارت ثقافت کے ساتھ دوطرفہ تعاون کے فروغ کے لیے ایک سمجھوتا بھی تیار کررہا ہے۔اس کے تحت روسی ماہرین سعودی عرب میں تاریخی آثار کی دریافت کے لیے مدائن الصالح سمیت اہم تاریخی مقامات کی کھدائی کریں گے۔