اقوام متحدہ کے ایلچی اور حوثی وفد کی امن مذاکرات میں شرکت کے لیے سویڈن آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفتھس اور حوثی باغیوں کا وفد ایک خصوصی طیارے کے ذریعے منگل کی شام صنعاء سے سویڈن پہنچ گیا ہے جہاں وہ یمن میں جار ی بحران کے خاتمے کے لیے یمنی حکومت کے ساتھ امن مذاکرات میں شرکت کریں گے۔

یمن کی قانونی حکومت کے عہدے دار آج بدھ کو ان مذاکرات میں شرکت کے لیے سویڈن پہنچ رہے ہیں۔فریقین کے درمیان2016ء کے بعد یہ پہلی امن بات چیت ہوگی۔اس کے آغاز کی تاریخ کا ابھی اعلان نہیں کیا گیا ہے ۔البتہ یمنی حکومت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ جمعرات کو ان مذاکرات کا آغاز ہوسکتا ہے۔

حوثیوں کی نام نہاد سپریم سیاسی کونسل کے سربراہ مہدی المشاط نے سویڈن میں ہونے والی امن بات چیت میں اپنے وفد کی شرکت کی تصدیق کی ہے۔قبل ازیں حوثیوں کے لیڈر محمد علی الحوثی نے اعلان کیا تھا کہ ان کا وفد3 دسمبر کو سویڈن پہنچ جائے گا لیکن حوثی ملیشیا کا وفد ایک دن کی تاخیر سے یمنی دارالحکومت سے روانہ ہوا تھا۔

اس وفد کے سربراہ اور ترجمان محمد عبدالسلام نے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس کی ان مذاکرات کے انعقاد کے لیے صلاحیت کے حوالے سے اپنے شک کا اظہار کیا ہے۔

یمن کی قانونی حکومت پہلے ہی ان مذاکرات میں شرکت کا اعلان کرچکی ہے ۔تاہم اس نے یہ شرط عاید کی تھی کہ حوثیوں کے وفد کی سویڈن میں آمد کے بعد ہی اس کا وفد مذاکرات میں شرکت کے لیے روانہ ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں