فرانس اور برطانیہ کا ایرانی میزائل تجربات پرسلامتی کونسل کا اجلاس بلانے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانیہ اور فرانس نے ایران کے متنازع بیلسٹک میزائلوں کے تجربات پرسلامتی کونسل کا اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق دونوں بڑے یورپی ملکوں‌نے ایران کے جوہری وار ہیڈ لے جانے والے بیلسٹک میزائل کے حالیہ تجربے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ ایران کو اس طرح کے تجربات کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ جوہری وار ہیڈ لے جانے والی صلاحیت والے بیلسٹک میزائل کی تیاری بین الاقوامی قوانین اور جوہری معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے۔

برطانیہ اور فرانس کی درخواست پرآج منگل کو سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس منعقد کیے جانے کا امکان ہے۔

ادھرامریکی انتظامیہ نے یورپی ممالک پر زور دیاہے کہ وہ ایران کے جوہری پروگرام اور بیلسٹک میزائلوں کے تجربات پر تہران پر پابندیاں عاید کریں۔

ایران کے لیے امریکا کے خصوصی ایلچی برین ہوک نے کہا کہ ایران کا میزائل پروگرام پرجام کاری رکھنے پراصرار اس بات کا ثبوت ہے کہ تہران عالمی برادری کے ساتھ کیےگئے وعدوں پرعمل درآمد نہیں کررہا ہے۔ انہوں‌ نے کہا کہ ایران کے جوہری وار ہیڈ لےجانے کی صلاحیت کے حامل میزائل عالمی امن کے لیے سنگین خطرہ ہیں۔

ادھر فرانس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اسے ایران کے بیلسٹک میزائل کے تجربے پر تشویش ہے۔ اطلاعات کے مطابق ایران نے درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے ایک ایسے بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا ہے جو وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

درایں اثناء برطانوی وزیرخارجہ جیرمی ھنٹ نے ایران کے بیلسٹک میزائل تجربے کو اشتعال انگیزی اور عالمی امن وسلامتی کے لیے سنگین خطرہ قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ ایران کو بیلسٹک میزائلوں کی تیاری سے روکنے کے لیے کوششیں جاری رکھے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں