.

امریکا ہواوے کی ایگزیکٹو کے خلاف وارنٹ گرفتاری واپس لے : چین

بیجنگ میں امریکی سفیر کی وزارتِ خارجہ طلبی،کینیڈا میں مینگ وان ژو کی گرفتاری پر سخت احتجاج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

چین کی وزارت خارجہ نے اتوار کے روز بیجنگ متعیّن امریکی سفیر کو طلب کیا ہے اور ان سے کینیڈا میں ہواوے ٹیکنالوجیز لمیٹڈ کی چیف فنانشیل آفیسر ( سی ایف او) کی گرفتاری پر سخت احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ امریکا کو ان کے خلاف جاری کردہ وارنٹ گرفتاری کو واپس لینا چاہیے۔

چین کے نائب وزیر خارجہ لی یو چنگ نے امریکی سفیر سے کہا ہے کہ اب مزید اقدامات کا انحصار امریکا کی کارروائی پر ہے۔

ہواوے کی عالمی چیف مالیاتی افسر مینگ وان ژو کو یکم دسمبر کو کینیڈا میں گرفتار کر لیا گیا تھا۔ اب کینیڈا انھیں بے دخل کرکے امریکا کے حوالے کرنے کی تیاریوں میں ہے۔امریکا نے ان پر الزام عاید کیا ہے کہ انھوں نے اپنی کمپنی کے ایک ایسی فرم سے روابط کو چھپایا تھا جس نے پابندیوں کے باوجود ایران کو آلات فروخت کرنے کی کوشش کی تھی۔

ان کی گرفتاری عین اس روز عمل میں آئی تھی جب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ارجنٹینا میں جی 20 کے سربراہ اجلاس کے اختتام پر چینی ہم منصب شی جین پنگ سے ملاقات کی تھی۔انھوں نے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی جنگ پر تبادلہ خیال کیا تھا اور اس کو 90 روز تک منجمد کرنے سے اتفاق کیا تھا۔

واضح رہے کہ ہواوے ٹیلی مواصلاتی آلات بنانے اور خدمات مہیا کرنے والی دنیا کی بڑی ٹیکنالوجی کمپنیوں میں سے ایک ہے۔اس کی مصنوعات یورپ اور افریقا سمیت دنیا بھر میں استعمال کی جاتی ہیں۔اس کے مختلف النوع ہواوے موبائل فونز اور انٹر نیٹ ڈیوائسز کے دنیا بھر میں کروڑوں صارفین ہیں۔