.

فرانسیسی وزیراعظم کا ’’پیلی صدری تحریک‘‘ کے مظاہروں کے بعد مکالمے کی ضرورت پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی وزیراعظم ایڈورڈ فلپ نے پیلی صدری تحریک کے ملک گیر مظاہروں کے بعد اس کے نمایندوں سے نئے مکالمے کی ضرورت پر زور دیا ہے اور کہا ہے کہ حکومت مہنگے رہن سہن پر ان کی تشویش کو دور کرے گی۔

انھوں نے ایک نشری نیوز کانفرنس میں کہا کہ ’’ مکالمہ شروع ہوچکا ہے اور اس کو جاری رہنا چاہیے۔صدر عمانوایل ماکروں گفتگو کریں گے اور اس مکالمے کو آگے بڑھانے کے لیے اقدامات تجویز کریں گے‘‘۔

انھوں نے اپنی کابینہ کے وزراء کے ساتھ سکیورٹی اجلاس کے بعد کہا کہ ’’ زرد صدری والوں کے ساتھ بات چیت کا ابھی وقت ہے اور آنے والے دنوں میں ان سے مذاکرات کی تجویز زیر غور ہے‘‘۔

فرانسیسی وزیر داخلہ کرسٹوفی کیسٹنر نے وزیراعظم فلپ کے ساتھ اس مشترکہ نیوز کانفرنس میں بتایا ہے کہ ملک بھر میں ’’زرد صدری تحریک‘‘ کے سوا لاکھ مظاہرین نے ہفتے کے روز احتجاجی مظاہروں میں حصہ لیا ہے اور پولیس نے ان میں سے 1385 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب زرد صدری تحریک کے مظاہروں پر قابو پالیا گیا ہے۔

انھوں نے احتجاجی مظاہروں میں شریک 118 افراد کے زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ ان کے ساتھ جھڑپوں میں 17 سکیورٹی اہلکار بھی زخمی ہوئے ہیں۔