ٹرمپ دفاعی اخراجات کے لیے 750 ارب ڈالر کے حامی ہیں : امریکی عہدے دار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک امریکی عہدے دار نے اتوار کے روز بتایا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ آئندہ سال دفاعی اخراجات کے لیے کانگریس سے 750 ارب ڈالر طلب کرنے سے متعلق منصوبوں کو سپورٹ کر رہے ہیں۔ اس طرح وزارت دفاع کے اخراجات میں اضافہ ہوتا دکھائی دے رہا ہے جب کہ دیگر سرکاری اداروں کو اخراجات کے حوالے سے کمی کا سامنا ہے۔

ٹرمپ نے جن کو چھ برس کے بلند ترین بجٹ خسارے کا سامنا ہے ، انہوں نے رواں سال اپنی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنی ایجنسیوں کے اخراجات میں پانچ فی صد تک کمی کے لیے تجاویز پیش کرے مگر امریکی صدر کا اس بات پر زور ہے کہ اس حوالے سے فوج کو بڑی حد تک مستثنی رکھا جائے۔

واضح رہے کہ 750 ارب ڈالر کی رقم پینٹاگون کی جانب سے 2020 کے مالیاتی سال کے لیے متوقع 733 ارب ڈالر کے مطالبے سے زیادہ ہے۔ علاوہ ازیں یہ 700 ارب ڈالر کی اس رقم سے بھی زیادہ ہے جس کا ذکر ٹرمپ نے اکتوبر میں کیا تھا۔

ایک امریکی عہدے دار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کے مطالبے پر بتایا کہ وزیر دفاع جیمز میٹس نے حالیہ دنوں میں ٹرمپ کے ساتھ بجٹ پر بات چیت کی ہے اور امریکی صدر کو دفاعی اخراجات میں اضافہ نہ کرنے کے خطرات سے آگاہ کیا۔ عہدے دار کے مطابق بات چیت کے دوران یہ واضح ہو رہا تھا کہ ٹرمپ اُس پیش رفت کو بڑھانا چاہتے ہیں جو ان کی انتظامیہ نے فوج کی از سر نو تشکیل کے حوالے سے یقینی بنائی ہے۔

وہائٹ ہاؤس کی جانب سے 750 ارب ڈالر کے مطالبے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں