.

جرمنی: دہشت گردی کی سازش میں داعش کی سہولت کار خاتون گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمن حکام نے ایک 40 سالہ خاتون کو گرفتار کیا ہے جس پر شبہہ ہے کہ اس نے انتہا پسند تنظیم ’’داعش‘‘ کے دو ارکان کی مدد کی تھی۔ یہ دونوں ارکان جرمنی میں ایک حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔

وفاقی استغاثہ کے مطابق "سونگل گی" نامی اس خاتون کی گرفتاری منگل کے روز ہیمبرگ شہر میں عمل میں آئی۔ یہ خاتون شام میں داعش تنظیم کے ایک مشتبہ رکن "ماركيا ایم" کے ساتھ رابطے میں تھی۔ بعد ازاں دونوں نے داعش تنظیم کے ایک اور رکن کے ساتھ مل کر ایک دہشت گرد حملے کی منصوبہ بندی کی۔

منصوبے کے تحت حملہ آوروں کو اسمگل کر کے جرمنی کے اندر پہنچانا تھا اور اس کے بعد ان کی شادیاں ایسی خواتین کے ساتھ ہونا تھیں جن کو اس سازش کا پہلے سے علم تھا۔

خیال ہے کہ 2016 میں سونگل نے ایک فرضی نام سے موبائل فون رجسٹرڈ کروایا اور پھر خود کو ایک ممکنہ حملہ آور کی میزبانی اور شادی کے لیے پیش کیا۔