.

اسرائیلی وفد ’’حزب اللہ کی سرنگوں‘‘پر روس میں مذاکرات کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کا ایک وفد آج منگل کے روز ایک روزہ دورے پر روس پہنچ رہا ہے جہاں وہ لبنان کے ساتھ سرحد پر "حزب اللہ کی سرنگوں" کے خلاف جاری آپریشن کو زیر بحث لائے گا۔ یہ بات اسرائیلی فوج کے ایک عسکری ذریعے نے بتائی۔ گذشتہ منگل کے روز سے جاری مذکورہ فوجی آپریشن کو نارتھ شیلڈ کا نام دیا گیا ہے اور یہ آپریشن کئی ہفتے جاری رہ سکتا ہے۔

دورے کے دوران اسرائیلی فوج کے آپریشنز چیف جنرل اہارون ہالیفا کے زیر قیادت وفد روسی فوج کو لبنان کے نزدیک جاری "آپریشن میں پیش قدمی" سے آگاہ کرے گا۔

ادھر اسرائیلی فوج نے پیر کے روز میس الجبل قصبے کے علاقے کروم الشراقی میں 4 بھاری مشینوں کے ذریعے کھدائی کا کام انجام دیا تاکہ وہاں رکاوٹ تعمیر کر کے سرنگوں کی تلاش کا کام کیا جا سکے۔

اسرائیل نے 5 دسمبر کو لبنان کے ساتھ سرحد پر اسرائیلی جانب 3 سرنگوں کے انکشاف کا اعلان کیا تھا۔ گذشتہ ہفتے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو نے روسی صدر ولادی میر پوتین کو ٹیلیفون کر کے ان کے ساتھ سرنگوں کے معاملے پر بات چیت کی تھی۔

تل ابیب میں روسی سفارت خانے کے مطابق پوتین نے باور کرایا کہ اسرائیل-لبنان کی پوری سرحد پر امن قائم رہنے کی ضرورت ہے۔

اس موقع پر نیتن یاہو نے ایک بار پھر اس موقف کو دہرایا کہ اسرائیل، شام میں ایران کے وجود کو پنجے گاڑنے سے روکے گا اور ایران اور حزب اللہ کی جانب سے کسی بھی جارحیت کے خلاف حرکت میں آئے گا۔