امریکا : ترکی کے لیے غیر قانونی لابنگ پر دو افراد پر فردِ جُرم عاید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

امریکا میں پراسیکیوٹرز نے دوافراد پر ترکی کے لیے غیر قانونی لابنگ کے الزام میں فرد ِ جُرم عاید کردی ہے ۔ترکی کے لیے یہ لابنگ مہم قومی سلامتی کے سابق مشیر مائیکل فلین کی قیادت میں چلائی گئی تھی اور اس کیس کا بھی تعلق خصوصی وکیل رابرٹ میولر کی تحقیقات سے ہے۔

مائیکل فلین کے دو سابق شراکت داروں بی جان کیان اور ترک کاروباری شخصیت ایکم الپتگین کے خلاف ترکی کے حق میں امریکی سیاست دانوں پر اثر انداز ہونے کے لیے خفیہ اور غیر قانونی سازش کے الزام میں فرد جرم عاید کی گئی ہے۔مائیکل فلین نے گذشتہ سال اپنے لابنگ کے کام کے مختلف پہلووں کے حوالے سے کذب بیانی سے کام لینے کا اعتراف کیا تھا۔انھوں نے ایف بی آئی سے اس وقت کے روسی سفیر سے اپنی گفتگو کے بارے میں جھوٹ بولنے کا بھی اعتراف کیا تھا ۔

تاہم مائیکل فلین نے بعد میں پراسیکیوٹرز کے ساتھ روس سے متعلق تحقیقات اور ایک فوجداری تحقیقات میں مدد دی تھی۔انھیں منگل کو سزا سنائی جائے گی۔

کیان کا پورا نام بی جان رفیع کیان ہے۔انھیں گرفتار کر لیا گیا ہے اور ریاست ورجینیا کے شہر اسکندریہ کی وفاقی عدالت میں سوموار کو انھیں پہلی مرتبہ پیش کیا گیا ہے۔ان پر غیرملکی ایجنٹ کے طور پر خود کو رجسٹر کرانے میں ناکامی پر فردِ جرم عاید کی گئی ہے۔

دوسرے شخص الپتگین ترکی کے علاوہ نیدرلینڈز کے بھی شہری ہیں۔وہ استنبول میں رہتے ہیں ۔ان کا پورا نام کامل ایکم الپتگین ہے۔وہ مفرور ہیں۔ان پر بھی خود کو ایجنٹ کے طور پر رجسٹر کرانے میں ناکامی اور جھوٹ بولنے کے الزام میں فرد جرم عاید کی گئی ہے۔اس فرد جرم میں سابق تین ستارہ جنرل فلین کا صرف ’’شخص اے‘‘ کے طور پر ذکر کیا گیا ہے۔

فرد جرم کے مطابق کیان اسکندریہ میں قائم فلین کے بزنس گروپ فلین انٹرنیشنل کے وائس چئیرمین تھے۔وہ دونوں 2016ء میں علامہ فتح اللہ گولن کو امریکا سے بے دخل کرکے ترکی کے حوالے کرنے کے لیے کام کرتے رہے تھے۔ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے گولن پر اپنی حکومت کا تختہ الٹنے کی ناکام سازش میں ملوث ہونے کا الزام عاید کیا تھا۔

فردِ جُرم میں کیان اور الپتگین پر الزام عاید کیا گیا ہے کہ انھوں نے امریکا میں فتح اللہ گولن کو بے توقیر کرنے کے لیے غیر قانونی طور پر لابنگ کی تھی۔موخر الذکر شخص ترک حکومت کی ہدایت پر کام کرتے رہے تھے مگر ان دونوں نے اس حقیقت کو چھپانے کی کوشش کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں