زرد صدریوں کا احتجاج ترکی پہنچ گیا ، مہنگائی کے خلاف احتجاج ایردوآن کے لیے چیلنج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے جنوب مشرقی شہر دیار بکر میں پیر کے روز ہزاروں افراد نے حالیہ چند ماہ میں کے دوران سامنے آنے والی مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔

کُرد اکثریت والے شہر دیار بکر کے وسطی علاقے میں ہونے والے اس احتجاج کی کال خدمات عامہ سے متعلق کنفیڈریشن آف ٹریڈ یونینز نے دی تھی۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت اقدامات کیے گئے تھے۔ بعض بینروں پر تحریر تھا کہ "ہم اقتصادی بحران کی قیمت ادا نہیں کریں گے" جب کہ بعض کی جانب سے فرانس میں "زرد صدریوں" کی تحریک کو سراہتے ہوئے ملک میں مزید سماجی انصاف کا مطالبہ کیا گیا۔

اس سے قبل ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن اپنے مخالفین کو دھمکی دے چکے ہیں کہ اگر فرانس میں زرد صدریوں کی طرز پر باہر نکلا گیا تو اس کے سنگین نتائج سامنے آئیں گے۔ ایردوآن کے مطابق جو لوگ زرد صدریوں کے ساتھ سڑکوں پر آئیں گے انہیں "بھاری قیمت چکانا پڑے گی"۔

واشنگٹن کے ساتھ سفارتی کشیدگی کے پس منظر میں مقامی کرنسی کی قیمت میں گراوٹ کے سبب گزشتہ چند ماہ کے دوران ترکی میں اقتصادی صورت حال کافی بگڑ گئی ہے جب کہ منڈیوں نے انقرہ کی پالیسیوں کو بھی مسترد کر دیا ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں