.

جدہ :قوتِ سماعت سے محروم خواتین کی باؤلنگ ٹیم تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں قوتِ سماعت سے محروم 12 خواتین باؤلروں پر مشتمل ایک ٹیم تیار کی گئی ہے اور وہ خلیج میں مقابلوں میں حصہ لینے کے لیے بالکل تیار ہے۔

سعودی عرب کی ڈیف اسپورٹس فیڈریشن کی رکن اور جدہ میں ڈیف کلب برائے خواتین کی صدر فائزہ ناتو نے اس ٹیم کو اکٹھے کیا اور اس کی تربیت کا اہتمام کیا ہے۔انھوں نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ باؤلنگ ٹیم کی تشکیل کی تجویز تو کئی سال قبل پیش کی گئی تھی لیکن ضروری فنڈز دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے اس کو عملی جامہ نہیں پہنایا جاسکا تھا۔

انھوں نے بتایا کہ اب بعض مخیّر حضرات نے ٹیم کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے عطیات دیے ہیں اور قوتِ سماعت سے محروم خواتین نے بھی کلب کا رُخ کرنا شروع کردیا تھا۔ان کے والدین کی اجازت کے بعد یہ باؤلنگ ٹیم بن گئی تو اس کی باضابطہ تربیت کا آغاز کردیا گیا تھا۔

انھوں نے مزید بتایا کہ اس ٹیم کی متعدد کوچ ہیں۔ابتدا میں ہفتے میں صرف ایک مرتبہ تربیتی سیشن ہوتا تھا لیکن کھلاڑیوں کے جوش ولولہ اور عزم کو دیکھتے ہوئے اس میں اضافہ کردیا گیا اور پھر تین دن تربیتی سیشن ہونے لگے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ اپنی نوعیت کی ایک منفرد ٹیم ہے۔حکومت کے علاوہ نجی شعبے نے بھی اس ٹیم کی تشکیل میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے خصوصی طور کلب کی سپریم کونسل کی چئیرمین شہزادی نوف بنت مِقرن بن عبدالعزیز کا شکریہ ادا کیا ہے جنھوں نے سب سے پہلے اس سلسلے میں دلچسپی کا اظہار کیا تھا۔

واضح رہے کہ جدہ میں بہری خواتین کا کلب 2001ء میں مکہ کے مرحوم شہزادے عبدالمجید کے حکم پر قائم کیا گیا تھا۔اس کا مقصد قوتِ سماعت سے محروم خواتین کی نفسیاتی اور جسمانی صحت کے لیے سازگار ماحول مہیا کرنا تھا تاکہ ان کی معاشرے میں گھلنے ملنے کے لیے بھی حوصلہ افزائی ہوسکے۔