.

سعودی فرمانروا شاہ سلمان کی مرحوم بھائی شہزادہ طلال بن عبدالعزیز کی نماز ِ جنازہ میں شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اپنے مرحوم بڑے بھائی شہزادہ طلال بن عبدالعزیز کی نمازِ جنازہ میں شرکت کی ہے۔مرحوم کی نمازِ جنازہ آج اتوار کو نمازِ عصر کے بعد دارالحکومت الریاض میں واقع جامع مسجد امام ترکی بن عبداللہ میں ادا کی گئی۔

نمازِ جنازہ میں شاہ سلمان کے خصوصی مشیر شہزادہ عبدالالٰہ بن عبدالعزیز آل سعود ، شہزادہ احمد بن عبدالعزیز ، شہزادہ مقرن بن عبدالعزیز آل سعود ، سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ، مرحوم شہزادہ طلال بن عبدالعزیز کے بیٹوں شہزادہ الولید بن طلال ، شہزادہ خالد بن طلال ، شہزادہ ترکی بن طلال ،صوبہ عسیر کے نائب گورنر شہزادہ عبدالعزیز بن طلال ، شہزادہ عبدالرحمان بن طلال ، شہزادہ منصور بن طلال ، شہزادہ محمد بن طلال اور شہزادہ مشہور بن طلال بن عبدالعزیز شریک تھے۔

بحرین کے شاہی خاندان کے سربراہ شیخ محمد بن خلیفہ بن حمد آل خلیفہ ، شہزادہ مولائی اسماعیل ،سعودی عرب میں متحدہ عرب امارات کے سفیر شیخ شخبوط بن نہیان آل نہیان ،سعودی عرب کے متعدد شہزادوں اور دوسرے اعلیٰ عہدے دار وں نے بھی نمازِ جنازہ میں شرکت کی۔

نمازِ جنازہ کے بعد شہزادہ طلال بن عبدالعزیز کی میت کو دارالحکومت الریاض کے نواح میں واقع العود قبرستان میں سپردِ خاک کردیا گیا۔

شہزادہ طلال بن عبدالعزیز آل سعود ہفتے کے روز 87 برس کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔ وہ گذشتہ کچھ عرصے سے علیل تھے۔وہ سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز کے ہاں 1931ء میں پیدا ہوئے تھے۔مرحوم سعودی عرب میں مختلف عہدوں پر فائز رہے تھے۔وہ عرب خلیج فنڈ برائے ترقی کے سربراہ تھے ۔اقوام متحدہ کے تحت یہ ادارہ ترقی پذیر ممالک میں تعلیم اور صحت کے شعبوں میں سہولتوں کے فروغ کے لیے کام کرتا ہے۔