.

یمن کی نئی فضائی کمپنی کی عدن سے اردن کے لیے پروازوں کا باقاعدہ آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی نئی قائم کردہ فضائی کمپنی ملکہ بلقیس ائیرویز نے جنوبی شہر عدن سے اردن کے دارالحکومت عمان کے لیے پروازوں کا باقاعدہ آغاز کردیا ہے۔

اردن میں ملکہ عالیہ ہوائی اڈے کے انتظام کے ذمے دار ائیرپورٹ انٹرنیشنل گروپ کے چیف ایگزیکٹو خلد بنجر نے بتایا ہے کہ یمن کی یہ نجی ملکیتی فضائی کمپنی عمان اور عدن کے درمیان ہفتے میں تین پروازیں چلائے گی۔

یمنی دارالحکومت صنعاء کا بین الاقوامی ہوائی اڈا اس وقت بین الاقوامی تجارتی پروازوں کے لیے بند ہے ۔صنعاء پر ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے قبضے کے بعد سے عرب اتحاد نے نوفلائی زون کا نفاذ کررکھا ہے اور وہاں سے طیارے اڑان نہیں بھر سکتے۔

سویڈن میں اسی ماہ کے اوائل میں یمن کے متحار ب فریقوں کے درمیان اقوام متحدہ کے زیر اہتمام امن مذاکرات میں صنعاء سے بین الاقوامی پروازوں کی بحالی پر غور کیا گیا تھا اور یمنی حکومت نے یہ شرط عاید کی تھی کہ صنعاء سے اڑان بھرنے اور وہاں اترنے کے لیے آنے والے تمام طیاروں کا عدن کے ہوائی اڈے پر معائنہ کیا جائے گا۔

یمن کی اس نئی ملکہ بلقیس ائیرویز کے حکام نے یہ نہیں بتایا ہے کہ یہ فضائی کمپنی کس کی ملکیتی ہے۔تاہم یہ معلوم ہے کہ یمن کی کاروباری شخصیات کے ایک گروپ نے حال ہی میں قومی فضائی کمپنی کو چلانے کے بعض حقوق حاصل کیے تھے۔یمن کی قومی فضائی کمپنی نے صنعاء پر حوثیوں کے قبضے کے بعد اپنی پروازیں معطل کردی تھیں۔