.

متحدہ عرب امارات کا قومی فضائی کمپنی کی دمشق کے لیے پروازیں بحال کرنے پر غور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی جنرل سول ایوی ایشن اتھارٹی ( جی سی اے اے) نے قومی فضائی کمپنی امارات ائیر لائنز کی شام کے دارالحکومت دمشق کے لیے پروازیں بحال کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے اتوار کو ایک بیان میں اس امر کی اطلاع دی ہے۔اس سے تین روز پہلے گذشتہ جمعرات کو متحدہ عرب امارات نے دمشق میں اپنا سفارت خانہ دوبارہ کھول دیا تھا۔یو اے ای کا سفارت خانہ 2011ء کے اوائل میں صدر بشارالاسد کے خلاف عوامی احتجاجی تحریک کے آغاز کے بعد بند کردیا گیا تھا۔

اس کے ایک سال کے بعد یو اے ای کی دو فضائی کمپنیوں اتحاد اور امارات نے سکیورٹی وجوہات کی بنا پر 2012ء میں دمشق کے لیے اپنی پروازیں معطل کردی تھیں۔

جب اتحاد ائیرویز سے اس سلسلےمیں رابطہ کیا گیا تو اس کا کہنا تھا کہ اس کا کو فوری طور پر دمشق کے لیے پروازیں بحال کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے ۔ البتہ اس نے واضح کیا ہے کہ وہ صورت حال کا مسلسل جائزہ لے رہی ہے۔

امارات ائیرلائنز کا بھی کہنا ہے کہ وہ صورت حال کا جائز ہ لے رہی ہے اوراس مرحلے پر پروازوں کی بحالی سے متعلق اس کے پاس اعلان کے لیے کچھ نہیں ہے۔