.

حوثی ملیشیا کی الحدیدہ میں 24 گھنٹے میں جنگ بندی کی 14 مرتبہ خلاف ورزی: عرب اتحاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب اتحاد نے کہا ہے کہ حوثی ملیشیا نے یمن کے ساحلی شہر الحدیدہ میں جنگ بندی کی خلاف ورزیاں جاری رکھی ہوئی ہیں اور ا س نے گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران میں 14 مرتبہ سویڈن میں طے شدہ جنگ بندی سمجھوتے کی خلاف ورزی کی ہے۔

عرب اتحاد نے سوموار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’حوثی ملیشیا نے انسانی امدادی سامان لے کر آنے والے جہازوں کو محفوظ راستہ دینے سے بھی انکار کردیا ہے اور جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہر طرح کے ہتھیار چلائے ہیں‘‘۔

عرب اتحاد نے مزید کہا ہے کہ ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے یمن کی قومی فوج کے بلڈوزروں پر فائرنگ کی ہے۔ یمنی فوج اس وقت بلڈوزروں سے بند شاہراہوں کو کھول رہی تھی اور رکاوٹیں ہٹا رہی تھی۔

دریں اثناء یمن میں اقوام متحدہ کےمبصر مشن کے سربراہ ریٹائرڈ میجر جنرل پیٹرک کمائرٹ نے الحدیدہ میں حوثی ملیشیا کی از سر نو صف بندی پر اپنے تحفظات کا اظہارکیا ہے۔ پیٹرک کمائرٹ ہفتے کی صبح الحدیدہ کی بندر گا ہ سے دارالحکومت صنعاء کے لیے پہلے انسانی امدادی قافلے کی روانگی کی نگرانی کے لیے گئے تھے لیکن حوثی ملیشیا نے الحدیدہ سے صنعاء تک انسانی امدادی راہداری کے طور پر استعمال ہونے والی ایک شاہراہ کو کھولنے سے انکار کردیا تھا۔