افغانستان کے شمال میں طالبان کے دو حملے ، 15 پولیس اہل کار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

افغانستان کے شمال میں واقع صوبے سرپل میں طالبان تحریک کے دو حملوں میں کم از کم 15 پولیس اہل کار اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

پہلے حملے میں جو صوبے کے صدر مقام سر پل شہر کے اطراف میں ہوا ،،، افغان فورسز نے حملہ آوروں کو روکنے کے لیے بھاری گولہ باری کی۔ اس دوران مقامی آبادی کے لوگ محفوظ رہنے کے لیے علاقے سے فرار ہو گئے۔

سر پل صوبے کی کونسل کے سربراہ محمد نور رحمانی کے مطابق پیر کو رات گئے ہونے والے دونوں حملوں میں 15 پولیس اہل کاروں کے مارے جانے کے علاوہ 21 زخمی بھی ہوئے۔ انہوں نے بتایا کہ سید کے علاقے اور سر پر شہر کے باہر کئی گھنٹوں تک گھمسان کی لڑائی جاری رہی۔

طالبان تحریک کے ترجمان قاری یوسف احمدی نے تحریک کی جانب سے دونوں حملوں کی ذمے داری قبول کر لی۔

واضح رہے کہ امریکا کی جانب سے مذاکرات کے ذریعے 17 برس سے جاری جنگ ختم کرنے کی بھرپور کوششوں کے باوجود ،،، طالبان تحریک قریبا ہر روز افغان فورسز کے خلاف حملے کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں