.

اقوام متحدہ ایلچی کی صنعاء آمد ، حوثیوں سے جنگ بندی سمجھوتے پر بات چیت کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس ہفتے کے روز دارالحکومت صنعاء پہنچ گئے ہیں۔ وہ حوثی ملیشیا کی قیادت سے ساحلی شہر الحدیدہ میں جنگ بندی سمجھوتے پر عمل درآمد کرانے کے لیے بات چیت کریں گے۔

قبل ازیں اقوام متحدہ نے یہ اعلان کیا تھا کہ مارٹن گریفتھس صنعاء جائیں گے اور پھر وہاں سے سعوی عرب روانہ ہو جائیں گے جہاں وہ یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی سے بات چیت کریں گے۔

دریں اثنا سویڈن میں گذشتہ ماہ یمنی حکومت اور حوثی ملیشیا کے درمیان الحدیدہ میں جنگ بندی کے لیے طے شدہ سمجھوتے پر عمل درآمد کی نگران اقوام متحدہ کی ٹیم کے سربراہ ڈچ ریٹائرڈ جنرل پیٹرک کمائرٹ بھی صنعاء پہنچ گئے ہیں۔ وہ مارٹن گریفتھس کے ساتھ حوثیوں سے سمجھوتے پر عمل درآمد کرانے کے لیے بات چیت کریں گے۔

اقوام متحدہ کے ایلچی اور مبصر ٹیم کے سربراہ یمنی فریقوں سے سہ فریقی رابطہ کمیٹی کے آیندہ منگل کو اجلاس سے قبل یہ ملاقاتیں کررہے ہیں۔یہ سہ فریقی رابطہ کمیٹی الحدیدہ سے حوثیوں کے انخلا اور یمنی فورسز کی ازسر نو تعیناتی کی ذمے دار ہے۔

قبل ازیں ڈچ جنرل پیٹرک کمائرٹ نے یمن میں مشاورت کا دوسرا دور مکمل کر لیا ہے جبکہ اس دوران میں حوثی باغیوں نے سویڈن سمجھوتے کی مسلسل خلاف ورزیاں جاری رکھی ہوئی ہیں۔وہ الحدیدہ شہر اور اس کی بندرگاہ سے انخلا سے مسلسل انکار کرتے چلے آرہے ہیں اور وہاں عام شہریوں اور یمنی فوج کے خلاف ہتھیار استعمال کررہے ہیں۔