.

شام سے فوج کے انخلاء کا ٹائم فریم نہیں دے سکتے: امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزارت خارجہ کے ایک سینیر عہدیدار نے کہا ہے کہ امریکا کے پاس شام سے فوج کے مکمل انخلاء کا کوئی ٹائم فریم نہیں تاہم امریکی فوج شام میں غیر معینہ مدت کے لیے قیام نہیں کرے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکا کی طرف سےفوج کے انخلاء سے یہ پیغام دیا گیا ہے کہ 'داعش' کے خلاف جنگ میں ہمارا مشن مکمل ہوگیا ہے۔

ادھر امریکی وزارت دفاع "پنٹاگون" کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ شام میں امریکا کی حمایت یافتہ ڈیموکریٹک فورسز 'داعش' سے علاقے واپس لینے کی جنگ جاری رکھے گی۔خیال رہے کہ دو ہفتے قبل امریکی صدر نے کہا تھا کہ وہ شام میں‌موجود 2000 امریکی فوجیوں کو واپس بلا رہے ہیں کیونکہ شام میں ان کا مشن پورا گیا ہے۔

تاہم شام سے انخلاء کے اعلان پرخود امریکی حکومت میں‌بھی اختلاف پایا جاتا ہے۔ وزیردفاع جیمز میٹس نے ٹرمپ کے اعلان کے بعد شام سے فوج نکالنے کی مخالفت کرتے ہوئے عہدے سے استعفیٰ دینے کا اعلان کیا۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ اگر موجودہ حالات میں امریکا نے شام سے اپنی فوج واپس بلائی تو 'داعش' کو دوبارہ منظم ہونے کاموقع مل جائےگا۔