.

امریکی تحفظات کے باوجود ایران کا مدار میں 2 سیٹلائٹس بھیجنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے صدر حسن روحانی نے جمعرات کے روز اعلان کیا ہے کہ اُن کا ملک عنقریب زمین کے مدار میں دو سیٹلائٹس بھیجے گا۔

روحانی کے مطابق یہ کارروائی آئندہ ہفتوں کے دوران عمل میں آئے گی اور مذکورہ سیٹلائٹس کو ایران کے تیار کردہ راکٹوں کے ذریعے مدار میں بھیجا جائے گا۔

ایران نے گزشتہ دہائی کے دوران مختصر مدت کے کئی سیٹلائٹس مدار میں بھیجے۔ سال 2013 میں اس نے ایک بندر کو خلا میں بھیجا تھا ۔ امریکا اور اس کے اتحادیوں کو اندیشہ ہے کہ سیٹلائٹ لانچنگ کی یہ ہی ٹکنالوجی طویل فاصلے کے میزائل تیار کرنے میں استعمال ہو سکتی ہے۔

امریکا کا کہنا ہے کہ مدار میں سیٹلائٹس بھیجنے سے متعلق ایران کے منصوبوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ تہران سلامتی کونسل کی اُس قرار داد کو چیلنج کر رہا ہے جو ایران کی کسی بھی ایسی سرگرمی کو ممنوع قرار دیتی ہے جس کا تعلق نیوکلیئر وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت کے حامل بیلسٹک میزائلوں سے ہو۔

ادھر ایران کا اصرار ہے کہ سیٹلائٹ لانچنگ کی کارروائیاں سلامتی کونسل کی قرار داد کی خلاف ورزی نہیں۔