زین العابدین بن علی کی برطرفی کا حامی ان کا داماد بن گیا

تیونسی موسیقار نے سابقہ موقف بارے اپنی وضاحت جاری کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

تیونس کے مفرورسابق صدر زین العابدین بن علی ایک ایسے شخص کے سسر بن گئے ہیں جو سنہ 2011ء میں ان کی برطرفی کےلیے پیش پیش رہاہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حال ہی میں جب ذرائع ابلاغ میں یہ خبر سامنے آئی کہ تیونس کے راپ موسیقار کادوریم نے زین العابدین بن علی کی صاحبزادی نسرین بن علی سے شادی کرلی ہے۔ اس خبر کے سامنے آنے کے بعد شہریوں نے سوشل میڈیا پر کادوریم کی ایک سابقہ فوٹیج دوبارہ نشر کی جس میں انہیں زین العابدین کی طرفی کی حمایت کرتے دیکھا اور سنا جاسکتا ہے۔ تیونس میں زین العابدین بن علی کے خلاف عوامی بغاوت کے دوران کادوریم بھی ان کے پاس گئے اور انہیں کہا تھا کہ ملک کے اندر اورباہر ہرطرف ایک ہی مطالبہ ہے کہ زین العابدین بن علی حکومت چھوڑ دیں۔ لہٰذا آپ فوری طور پراقتدا سے الگ ہوجائیں۔ عرب بہاریہ کے دوران بن علی کی برطرفی میں کادرویم پیش پیش رہے تھے۔

تیونس کے سوشل میڈیا پر پرانی فوٹیج دوبارہ نشر ہونے پر کادوریم کو دفاعی پوزیشن اختیار کرنا پڑی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے بن علی کی برطرفی کی حمایت کی تھی تو اس وقت ہرطرف ایک ہی آواز تھی۔ لوگوں کے ذہن یرغمال بنا لیے گئے تھے۔ میں بھی اسی نفرت اور بغض کا شکار ہوگیا تھا۔ مگر وقت گذرنے کے ساتھ حقیقت آشکار ہوگئی۔ دیگر نوجوانوں کی طرح میں بھی چاہتا تھا کہ ملک میں لوگوں کو زیادہ سے زیادہ آزادی حاصل ہو اور ملک میں کرپشن کا خاتمہ ہو۔ مگر ہمارے یہ خواب پورے نہیں ہوئے۔ زین العابدین بن علی کی برطرفی کے بعد تیونس کے حالات مزید بگڑ گئے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ شیہریوں کا میرے موقف میں تبدیلی کا تمسخر اڑنا بجا ہے مگر میں اب پہلے کی طرح اندھے بغض اور نفرت کا شکار نہیں ہوں۔ اس کا ثبوت نسرین کے ساتھ پیار اور شادی کرنا ہے۔ میں زین العابدین بن علی کےپورے خاندان کے ساتھ محبت کرتا ہوں۔

انہوں‌نے ایک تصویر بھی پوسٹ کی جس میں نسرین اور اس کے والد زین العابدین بن علی بھی دیکھے جاسکتے ہیں۔ تینوں ایک ساتھ بیٹھے ہیں۔ جب کہ نسیرن درمیان میں ہے جس میں ایک طرف اس کا والد اور دوسری طرف کادرویم دیکھے جاسکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں