.

پاپائے روم نے میاں بیوی کو مشروط طورپر باہمی لڑائی کی اجازت دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاپائے روم پوپ فرانسیس نے کہا ہے کہ والدین کو بچوں سے دور رہ کراپنی لڑائی لڑنی چاہیے۔ ان کا کہنا ہے کہ میاں بیوی آپس میں باہمی لڑائی لڑسکتے ہیں مگر انہیں یہ سب کچھ بچوں سے دور رہ کر کرنا چاہیے۔ اگر والدین بچوں کے سامنے ایک دوسرے سے الجھیں گے تو اس کے بچوں پر منفی نفسیاتی اثرات مرتب ہوں‌گے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 27 بچوں‌کو بپتسمہ دینے کی تقریب سے خطاب میں پوپ فرانسیس کا کہنا ہتھا کہ میں والدین کو مشورہ دیتا ہوں کہ وہ اپنے بچوں میں ایمان کی منتقلی کا اپنا فرض پورا کریں۔

اس موقع پر پوپ فرانسیس نے والدین کو کچھ غیر رسمی نصیحتیں بھی کیں۔انہوں نے کہا کہ میاں‌بیوی میں الجھنیں فطری امر ہے۔ اگر وہ لڑیں گے نہیں تواس پر حیرت ہوگی۔ وہ لڑیں ضرور مگر بچے اسے دیکھیں اور نہ ہی سنیں۔