.

جرمنی : افغان نژاد جرمن فوجی مشیر ایران کے لیے جاسوسی کے الزام میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی میں حکام نے ایک افغان نژاد جرمن شہری کو ایران کے لیے جاسوسی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔وہ جرمن فوج کے لیے لسانیات اور ثقافتی مشیر کے طور پر کام کررہا تھا۔

جرمنی کے وفاقی پراسیکیوٹرکے ایک بیان کے مطابق اس پچاس سالہ مشیر کی شناخت عبدالحمید ایس کے نام سے کی گئی ہے اور اس کو مغربی جرمنی میں گرفتار کیا گیا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ’’ یہ شخص جرمنی کی مسلح افواج میں لسانی ماہر اور ثقافتی امور کے مشیر کے طور پر کام کررہا تھا ۔ اس کے بارے میں یقین کیا جاتا ہے کہ اس نے ایران کی انٹیلی جنس سروس کو معلومات فراہم کی تھیں‘‘۔

جرمن اخبار اسپیگل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق اس مشتبہ ملزم کے بارے میں شُبہ ہے کہ وہ گذشتہ کئی سال سے ایران کی خفیہ سروس کے لیے جاسوسی کررہا تھا۔ جرمن فوج میں ملازمت کی وجہ سے اس کو افغانستان میں جرمن فوجیوں کی تعیناتی سمیت انتہائی حساس معلومات تک رسائی حاصل تھی۔