.

لیبی فوج کی ملک میں مداخلت پر ترکی اور قطر کو سنگین نتائج کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی فوج نے خبردار کیا ہے کہ ملک میں ترکی اور قطر کی جانب سے جاری مداخلت کے سنگین نتائج سامنے آئیں گے۔ فوجی ترجمان بریگیڈیئر احمد المسماری کا کہنا ہے کہ جنوبی لیبیا میں جاری الکرامہ فوجی آپریشن کے دوران ترکی اور قطر کی دم کاٹ دی جائے گی۔

العربیہ ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے لیبی فوج کے ترجمان نے کہا کہ جنوبی لیبیا میں دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن کے دوران ترکی اور قطر کی دم کاٹ دیں گے۔

بریگیڈیئر المسماری نے ترکی اور قطر پر لیبیا میں افراتفری پھیلانے والے ٹی وی چینلوں کو فنڈز فراہم کرنے کا الزما عاید کیا اور کہا کہ استنبول اور دوحا سے نشر ہونے والے چینل لیبیا میں انارکی کو ہوا دے رہے ہیں۔

درایں اثناء قطر نواز لیبی شدت پسند عبدالحکیم بلحاج کے ملکیتی ٹی وی چینل نے فروری کے اوائل سے اپنی نشریات بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔

بلحاج اور اور اس کے ٹی وی چینل پر لیبیا میں دہشت گردوں کی حمایت اور لیبی فوج کے خلاف نفرت کو ہوا دینے کا الزام عاید کیا جاتا ہے۔

دہشت گردی کے خلاف متحد چار عرب ممالک سعودی عرب، مصر، امارات اور بحرین نے النبا ٹی وی چینل کو دہشت گردوں کا ترجمان قرا دینے اور قطر کی حمایت پر بلیک لسٹ کررکھا ہے۔