یو این مبصرین پر حوثی حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں: شہزادہ خالد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا میں سعودی عرب کے سفیر شہزادہ خالد بن سلمان کا کہنا ہے کہ اُن کا ملک یمن میں ایران نواز حوثی ملیشیا کی جانب سے اقوام متحدہ کے مبصر مشن کے عہدیداروں کو نشانہ بنانے کی سخت مذمت کرتا ہے۔

جمعے کو علی الصبح انگریزی زبان میں کی گئی ٹویٹ میں شہزادہ سلمان نے باور کرایا کہ حوثی ملیشیا نے اسٹاک ہوم میں دستخط کی جانے والی دستاویز کی خلاف ورزی کی ہے۔ اس نے بین الاقوامی قانون کی پامالی اور یمنی عوام کے خلاف جارحیت اور چڑھائی کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

اقوام متحدہ کے مبصر مشن کے سربراہ جنرل پیٹرک کمائرٹ کے قافلے کو الحدیدہ شہر کے مشرقی حصے میں حوثی ملیشیا کی جانب سے اُس وقت فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا جب وہ "اخوان ثابت" انڈسٹریل کمپلیکس میں یمنی حکومت کے وفد کے ساتھ ملاقات کے بعد واپس لوٹ رہے تھے۔

یمنی حکومت کے ترجمان راجح بادی نے باور کرایا کہ کمائرٹ کی گاڑی پر حوثیوں کی فائرنگ انتہائی خطرناک اقدام ہے۔

ادھر اقوام متحدہ نے الحدیدہ میں حوثی ملیشیا کی فائرنگ کے بعد اپنی ٹیم کے محفوظ رہنے کی تصدیق کی ہے۔ اقوام متحدہ کے ترجمان کے دفتر نے ٹویٹر پر جاری بیان میں کہا ہے کہ "الحدیدہ میں فائرنگ کے واقعے کے بعد کمائرٹ اور ان کی ٹیم محفوظ ہے۔ بعد ازاں مزید معلومات آئیں گی"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں