مراکش میں والدین درندہ بن گئے، بیٹی 20 سال تک اصطبل میں بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

افریقی عرب ملک مراکش میں والدین کو جواں سال بیٹی کو اس کے والدین کی جانب سے مسلسل 20 سال تک گھوڑوں کے اصطبل میں بند رکھنے کی خبر نے پورے معاشرے کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ پولیس نے بیٹی کو اصطبل میں بند رکھنے کی پاداش میں اس کی والدین کو حراست میں لے لیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق لڑکی کو طویل عرصے تک اصطبل میں بند رکھنے کے واقعے نے پوری قوم کو صدمے سے دوچار کیا ہے۔ یہ واقعہ جنوبی مراکش کے "کفرالبرجہ" کے مقام پر پیش آیا جہاں والدین نے غیرانسانی اور وحشیانہ پن کا مظاہرہ کرتے ہوئے بیٹی کو 20 سال تک اصطبل میں بند رکھا ہے۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق لڑکی کو چند سال قبل آبرو ریزی کا نشانہ بنایا گیا تھا شاید یہی وجہ ہے کہ اس کے والدین نے اسے مویشیوں کے باڑے میں‌بند کردیا تھا۔

خاتون کو بازیاب کرانے کےبعد طبی معائنے کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ اس وقت اس کی عمر 45 سال ہے۔ پولیس نے واقعے کی تحقیقات جاری ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں