جرمنی : حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں تین عراقی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جرمنی میں پولیس نے تین عراقی شہریو ں کو حملے کی منصوبہ بندی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

جرمن پراسیکیوٹر کے دفتر کے مطابق ان گرفتار تین مشتبہ افراد میں سے دو نے 2018ء کے آخر میں جرمنی میں ایک حملے کی منصوبہ بندی کی تھی۔ان کی شناخت شاہین ایف ، ہرش ایف اور رؤف ایس کے نام سے کی گئی ہے۔

بدھ کو جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’آج کی تاریخ تک کی تحقیقات کے مطابق ان مشتبہ افراد نے ابھی تک اپنے حملے کے ہدف کا انتخاب نہیں کیا تھا‘‘۔ان مشتبہ افراد کو جرمنی کی شمالی ریاست شلیس وگ ہولسٹین میں گرفتار کیا گیا ہے۔

شاہین ایف نے بم سازی کے لیے انٹرنیٹ سے ہدایات ڈاؤن لوڈ کی تھیں اور برطانیہ میں اپنے ایک رابطے سے ڈیٹوینٹر خرید کر بھیجنے کے لیے کہا تھا لیکن برطانوی حکام نے اس کو جرمنی بھیجنے سے روک لیا تھا۔

دفتر کے مطابق شاہین ایف اور ہرش ایف نے نئے سال کے لیے آتش بازی کے سامان سے دھماکا خیز مواد تیار کرنے کی کوشش کی تھی اور رؤف ایس سے ایک بندوق کی خریداری کے لیے رابطہ کیا تھا۔

بیان میں تحقیقات کے حوالے سے مزید کہا گیا ہے کہ’’ ان مشتبہ افراد نے حملے میں ایک موٹر گاڑی استعمال کرنے پر بھی غور کیا تھا اور شاہین ایف نے 2019ء کے اوائل میں ڈرائیونگ سیکھنے کے لیے اسباق میں شرکت کی تھی‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں