.

ایردوآن کی دھمکی کے بعد ترک ٹی وی اینکر عہدے سے مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے ایک نجی ٹی وی چینل 'فاکس ٹی وی' سے وابستہ ایک ترک سینیر صحافی اور ٹی وی شوکے میزبان فاتح بورتاکال نے صدر رجب طیب ایردوآن کی جانب سے دھمکی کےبعد عہدے استعفیٰ دے دیاہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مائیکروبلاگنگ ویب سائیٹ 'ٹوئٹر'پر ایک ٹویٹ میں مستعفی ہونے والے صحافی کا کہنا تھا کہ ایک ماہ قبل انہیں صدر طیب ایردوآن کی طرف سے سنگین نتائج کی دھمکی دی گئی تھی جس کے بعد اس نے عہدہ چھوڑںے کا فیصلہ کیا ہے۔

فاتح برتاکال کا پروگرام 'فاکس ٹی وی' کے مقبول پروگرامات میں سے ایک تھا۔ فاتح کے استعفے کے بعد اس پروگرام کو آگے کون بڑھائے گا اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ صحافی فاتح برتاکال نے 10 دسمبر2018ء کو اپنے ایک پروگرام میں اپوزیشن پر حکومتی دبائو کی مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ حکومتی دبائو کے باعث شہری گیس مہنگی کرنے کے خلاف احتجاج کی جرات بھی نہیں کرسکتے۔ اس کے چند روز بعد صدر طیب ایردوآن نے صحافی فاتح برتاکال کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اورکہا کہ وہ اپنے پروگرام میں لوگوں کو حکومت کے خلاف سڑکوں ہر نکلنے پر اکسا رہے ہیں۔ صدر ایردوآن نے کہا تھا کہ فاتح برتاکال اپنی حدوں میں رہے ورنہ اسے سنگین نتائج بھگتنا ہوں گے۔