.

ایران ایک "بدعنوان آمریت" ہے، جوہری ہتھیار حاصل نہیں کر سکے گا: ٹرمپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر نے اپنے سالانہ اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں متعدد اندرونی اور بیرونی امور پر بات کی جن میں ایران کو جوہری ہتھیار حاصل کرنے سے روکنے کے لیے امریکی کوششوں کا ذکر سرفہرست ہے۔ انہوں نے روس اور شمالی کوریا کے ساتھ تعلقات کے علاوہ افغانستان میں امن کے واسطے حالیہ مساعی پر بھی روشنی ڈالی۔

کانگریس کے سامنے اپنی تقریر میں ٹرمپ کا کہنا تھا کہ "ہم امریکی معاشرے کو زیادہ محفوظ بنانے پر کام کر رہے ہیں۔ میری انتظامیہ نے امریکا اور امریکیوں کے لیے ایسی پیش رفت کو یقینی بنایا ہے جس کی مثال اس سے پہلے نہیں ملتی"۔

امریکی صدر نے کہا کہ امریکا اس وقت ایک اقتصادی معجزے سے گزر رہا ہے جس کو جنگوں اور بے ہودہ قسم کی تحقیقات کے سوا کوئی چیز نہیں روک سکتی۔

امریکی صدر کا براہ راست اشارہ امریکی صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت کی تحقیقات کی جانب تھا۔

ٹرمپ کے مطابق جنوبی سرحد پر 3750 اضافی فوجیوں کو بھیج دیا گیا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ وہ میکسیکو کے ساتھ امریکا کی سرحد پر دیوار کی تعمیر پر کام کریں گے۔

امریکی صدر نے کانگریس کے ارکان کے سامنے کہا کہ "چین نے امریکی مصنوعات کو نشانہ بنایا اور کئی برس تک Intellectual property rights کے سرقے کا ارتکاب کیا۔ ہم چین کے ساتھ ایک نئے معاہدے کے لیے کام کر رہے ہیں"۔

جوہری ہتھیاروں پر پابندی کے سمجھوتے سے امریکا کی علاحدگی پر ٹرمپ نے کہا کہ روس نے کئی بار درمیانے فاصلے کے جوہری میزائلوں کے معاہدے کی خلاف ورزی کی۔

امریکی صدر نے بتایا کہ شمالی کوریا کے سربراہ کے ساتھ ان کے اچھے تعلقات ہیں اور وہ 27 فروری کو ویتنام میں کم یونگ اُن سے دوبارہ ملاقات کریں گے۔

ٹرمپ نے کہا کہ "ہم وینزویلا میں آزادی کی کوششوں کو سپورٹ کرتے ہیں اور میڈورو کی بدمعاشی کی پالیسی کی مذمت کرتے ہیں"۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل کے حقیقی دارالحکومت کو تسلیم کر کے ہم نے بیت المقدس میں سفارت خانہ کھولا۔

امریکی صدر کے مطابق عظیم ممالک نہ ختم ہونے والی جنگوں میں پھنسے نہیں رہتے۔

افغانستان کے حوالے سے ٹرمپ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں طویل اور خون ریز تنازع کے خاتمے کے لیے ایک سیاسی حل تلاش کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں متعدد جماعتوں کے ساتھ تعمیری مذاکرات جاری ہیں، ان جماعتوں میں تحریک طالبان بھی شامل ہے۔

ایران کے حوالے سے تعلقات پر روشنی ڈالتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ ایران "بدعنوان آمریت" ہے اور تہران جوہری ہتھیار ہرگز حاصل نہیں کر سکے گا۔ انہوں نے کہ واشنگٹن ایسے نظام کی جانب سے اپنی آنکھیں بند نہیں کرے گا جو امریکا مردہ باد کی پکار لگاتا ہو۔

ٹرمپ کے مطابق امریکا نے ایران میں دہشت گرد بنیاد پرست نظام کا راستہ روکا۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ "ہم کسی طور بھی ایران کو جوہری ہتھیاروں کا مالک نہیں بننے دیں گے"۔