.

حوثیوں کا ایک سینئر فوجی افسر پراسرار طور پر قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی حوثی ملیشیا کا کہنا ہے ان کا ایک سینیر عسکری عہدیدار مشرقی صنعاء کے نھم کے محاذ پر پُراسرار طور پر قتل کر دیا گیا، جس کے بعد اس علاقے میں فوجی کارروائی روک دی گئی ہے۔

حوثیوں کے زیر کنٹرول خبر رساں ایجنسی کے مطابق نھم کے محاذ پر پراسرار طور پر ہلاک ہونے والے بریگیڈیئر محمد عبداللہ المترب کی تدفین کردی گئی ہے۔ حوثی لیڈروں کا کہنا ہےکہ وہ نھم کے محاذ پر اپنی ذمہ داریوں کی انجام دہی کے دوران مارے گئے تھے۔ بریگیڈیئر المترب کی تدفین میں حوثی لیڈروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

کسی آزاد ذرائع سے حوثی فوجی افسر کی ہلاکت کی تفصیلات معلوم نہیں ہو سکی ہیں۔ حوثیوں کے مقرب ذرائع کا کہنا ہے کہ بریگیڈیئر المترب کی موت تنظیم کے اندر پائے جانے اختلافات اور محاذ آرائی کا نتیجہ ہو سکتی ہے۔ انہوں‌ نے کچھ عرصے سے نھم کے محاذ پر یمن کی آئینی حکومت کے خلاف آپریشن روک دیا تھا جس کے بعد انہیں شک کی نگاہ سے دیکھا جا رہا تھا۔

بریگیڈیئر المترب کو حوثیوں کی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ عبدالخالق الحوثی کا اس محاذ پر نائب سمجھا جاتا تھا۔