.

مصر میں لکڑی سے چلنے والی انوکھی ’’اے ٹی ایم ایجاد‘‘ ہو گئی

خبر دار! 'اے ٹی ایم' میں کرنٹ ہے، ہاتھ کے بجائے لکڑی استعمال کریں'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں سوشل میڈیا پر ایک منفرد خبر گردش کر رہی ہے۔ یہ خبر ایک بینک کے باہر نصب 'اے ٹی ایم' مشین سے متعلق ہے جس کے بارے میں کہا جاتا ہے اس میں بجلی کا کرنٹ آ جانے کی وجہ سے اسے ہاتھ نہیں لگایا جا سکتا بلکہ اسے مشین کے ساتھ لٹکنے والے لکڑی کے ٹکڑے کی مدد سے استعمال کیا جا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق لکڑی کے ’’ دیسی اسٹائلس‘‘ ساتھ چلائی جانے والی یہ 'اے ٹی ایم' شمالی گورنری دقھلیہ کے دکرنس شہر میں موجود ہے۔

ایک مقامی شہری نے محمود رمضان السعید نے کرنٹ والی اس 'اے ٹی ایم' کی اپنے موبائل فون میں تصاویر محفوظ کرنے کے بعد سوشل میڈیا پر پوسٹ کیں۔ 'اے ٹی ایم' پر ایک کاغذ پر عربی میں نوٹس چسپا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ 'مشین میں کرنٹ ہے۔ اس لیے ہاتھ کے ذریعے آپریٹ کرنے سے گریز کریں '۔

اس خبر کے سامنے آنے کے بعد لوگوں نے اس پر ملے جلے تبصرے کیے ہیں۔ صارفین کا کہنا ہے کہ اگر اے ٹی ایم میں کرنٹ ہے تو اسے استعمال کرنے میں شہریوں‌ کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ایک صاحب نے مشین پر لکڑی کا ایک چھوٹا سا ٹکڑا لٹکا رکھا ہے تاکہ اس کی مدد سے مشین سے رقم نکالی جا سکے۔ ایک دوسرے صارف نے بتایا لکڑی کا ٹکڑا مشین کے ساتھ ایک دھاگے سے باندھ رکھا ہے تاکہ وہ گر نہ سکے۔

انٹرنیٹ پر بعض صارفین نے اسے جعلی خبر قرار دیا تاہم تصاویر لینے والے صارف کا کہنا ہے کہ وہ اس کی تصدیق کرتے ہیں کہ مشین میں کرنٹ ہے۔ یہ اطلاع سچی ہے۔