اسرائیل نے عراق میں "عملی اقدامات" کی دھمکی دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کی صورت حال کے جائزے پر مبنی اسرائیلی عسکری انٹیلی جنس کی سالانہ رپورٹ میں عندیہ دیا گیا ہے کہ عراق کے اندر فوجی کارروائی کا امکان موجود ہے۔

بدھ کے روز جاری رپورٹ کے مطابق جائزے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ تہران شام میں ایرانی اہداف پر اسرائیلی حملوں کے بعد عراق میں عسکری اور میزائل تنصیبات کا قیام عمل میں لا سکتا ہے۔

انٹیلی جنس اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ایسی صورت میں اسرائیل پر لازم ہے کہ وہ عراق کے حوالے سے اپنی انٹیلی جنس کوششوں کو بڑھا دے۔ مزید برآں عراق میں ایرانی وجود نے اگر عسکری خطرے کی صورت اختیار کی تو اسرائیل وہاں عملی اقدامات کا امکان سامنے رکھے۔

شام کے حوالے سے اسرائیلی انٹیلی جنس اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ایران نے وہاں اپنی فورسز کی تعیناتی کا انداز تبدیل کر لیا ہے اور وہ اسرائیل کے ساتھ سرحد کے نزدیک واقع علاقوں سے دور ہو رہی ہیں۔

جائزہ رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ایران خود پر سے اقتصادی پابندیاں اٹھوانے کے لیے عالمی برادری کو مجبور کرنے کی کوشش کے سلسلے میں جوہری میدان میں اشتعال انگیز اقدامات کر سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں