.

کینیڈین عدالت سے داعشی خاتون کو سات سال قید کی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کینیڈا کی ایک عدالت نے دہشت گردی میں ملوث شدت پسند گروپ 'داعش' کے ساتھ تعلق کے الزام میں ایک خاتون کو سات سال قید کی سزا سنائی گئی۔

خبر رساں اداروں کے مطابق 34 سالہ رحاب دغمش پر سنہ 2017ء کو ٹورنٹو میں ایک شاپنگ مال میں حملے کا بھی الزام عاید کیا جاتا ہے۔

رحاب دغمش کو کینیڈین پولیس نے جون 2017ءکو حراست میں لیا اور اس پر چار الزامات کے تحت مقدمہ چلایا گیا۔ اس پر غیرقانونی طورپر ملک سے باہر سفر، دہشت گرد تنظیم سے تعلق، گالف اسٹک سے دو بار حملوں اور قصاب کے ٹوکے سے قاتلانہ حملے کے الزامات عاید کیے گئے۔

انٹاریو کی سپریم کورٹ کی خاتون جج مورین فورسٹیل کا کہنا ہے کہ دغمش کو ایک دماغی بیماری لاحق ہے اور اس مرض شکار افراد آسانی کے ساتھ انتہا پسندوں کا چارہ بن جاتے ہیں، تاہم ساتھ ہی خاتون جج کا کہنا تھا کہ دغمش نے جن جرائم کا ارتکاب کیا ہے اس پر اسے معاف نہیں کیا جاسکتا۔

رحاب دغمش نے اپریل 2016ء کو شام کے سفر کی بھی کوشش کی تھی تاہم جب وہ بیرون ملک جانے میں ناکام رہی تو اس نے ایک تجارتی مرکز پرحملہ کردیا تھا۔

اسے ترکی میں شام جاتے ہوئے حراست میں لیا گیا۔ پہلے اس نے اپنے خاندان سے ملنے کے لیے جانے کا دعویٰ کیا بعد ازاں اس نے تسلیم کرلیا تھا کہ وہ داعش میں شمولیت کی غرض سے شام کا سفر کرنا چاہتی تھی۔