.

ایران کو یمن میں قدم رکھنے کی اجازت نہیں دیں گے: یمنی آرمی چیف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی مسلح افواج کے سربراہ جنرل عبداللہ النخعی نے کہا ہے کہ ایران کو یمن میں قدم رکھنے، اپنے کلچر کو فروغ دینے اور عرب خطے کو تباہ کرنے کے پروگرام کی اجازت نہیں دیں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ یمنی قوم اور اس کے عرب اتحادی ممالک ایرانی پروگرام کو ہرصورت میں ناکام بنائیں گے۔ انصاف اور مساوات کی فتح ہوگی اور یمن ایک جدید اور ترقی یافتہ ریاست بنے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی آرمی چیف نے ان خیالات کا اظہار عدن میں سعودی عرب کی مسلح افواج کے عہدیداروں سے ملاقات میں کیا۔ اس ملاقات میں یمن کے مختلف محاذوں پر جاری جنگ، باغیوں کے تسلط سے شہروں کی آزادی اور باغیوں کے خلاف جاری کارروائی پر بات چیت کی گئی۔

یمنی آرمی چیف نے سعودی عرب کی مسلح افوج کے عہدیداروں کا خیر مقدم کیا اور ریاض کی جانب سے یمن میں حوثی ملیشیا کے خلاف جاری لڑائی میں مدد پرخصوصی شکریہ ادا کیا۔ جنرل الںخعی کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اور دیگر عرب اتحادی ممالک کی معاونت سے یمن کو ایرانی رجیم کے چنگل سے آزاد کرانے کی راہ ہموار ہوئی ہے یمن کے حوالے سے ایران کے تمام خواب چکنا چور ہوگئے ہیں۔

اس موقع پر سعودی عسکری قیادت نے یمنی آرمی چیف کو یمن میں حوثی باغیوں کے خلاف جاری لڑائی منطقی انجام تک پہنچانے کے عزم کا اعادہ کیا۔