.

سعودی عرب کی 'ابشر ایپلی کیشن' کے خلاف منفی پروپیگنڈے کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان منصور الترکی نے اسمارٹ فون پر شہریوں کی سہولت کے لیے جاری کی گئی 'ابشر اپیلی کیشن' کے خلاف جاری منفی پروپیگنڈے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان منصور الترکی نے 'العربیہ' سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ 'ابشر ایپلی کیشن' کے حوالے سے بلا جواز منفی پروپیگنڈہ کیا جا رہا ہے۔ عالمی سطح پر اور امریکی کانگریس میں سعودی عرب کی اس اسمارٹ سروس کے خلاف اشتعال انگیزی ناقابل قبول ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ ایپلی کیشن سعوی عرب کے شہریوں اور مملکت میں رہنے والے غیر ملکیوں سب کی سہولت کے لیے جاری کی گئی ہے جس کا مقصد شہریوں کی سرگرمیوں‌ پر نظر رکھنا ہر گز نہیں ہے۔

وزارت داخلہ نے'ابشر ایپلی کیشن' کو حکومت کے ہاتھ میں مانیٹرنگ کا آلہ قرار دینے کی بھی تردید کی ہے۔

خیال رہے کہ بعض عالمی تنظیموں اور امریکی کانگریس کےارکان نے 'ابشر' ایپلی کیشن' پر سخت تنقید کرتے ہوئے اسے سعودی عرب کے شہریوں کی جاسوسی کا حکومتی ہتھکنڈہ قرار دیا ہے جب کہ حکومت کا کہنا ہے کہ یہ ایک ایسی اسمارٹ فون سروس ہے جسے بزرگ شہری، خواتین، نوجوان اور معذور افراد فائدہ اٹھا رہے ہیں۔