.

سینڈوچ' چوری کرنے پر سیاست دان کو پارلیمنٹ کی رکنیت سے ہاتھ دھونا پڑ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سلوینیا کے ایک رکن پارلیمنٹ کو دکان سے سینڈوچ چوری کرنے کے الزام میں پارلیمنٹ سے نکال دیا گیا ہے۔

العربیہ ڈٹ نیٹ کے مطابق سلوینیا کے ایک رکن پارلیمنٹ ڈاری کراسیٹچ نے دارالحکومت لیوبلیانا کے ایک دکان سے سینڈوچ چوری کیا جس پر ان کے خلاف مقامی پولیس اسٹیشن میں درخواست دی گئی تھی۔

دوسری جانب کراسیٹچ کا کہنا ہے کہ اس نے ایک دکان میں سینڈوچ کا آرڈر دیا مگر وہاں پرموجود ورکروں‌ نے اس کی بات پر کوئی توجہ نہ دی جس پر اس نے مایوس ہو کر ایک سینڈوچ چوری کیا۔ اس کا کہنا ہے کہ میں ملازمین کا ردعمل جاننے کی کوشش کر رہا تھا۔

سلوینیا کی حکمراں‌ جماعت کے رکن نے ایک دکان سے سینڈوچ کا آرڈر دیا مگر اسے سینڈوچ نہیں دیا گیا جس پر اس نے چپکے سے ایک سینڈوچ اٹھایا اور باہر نکل گئے۔ کچھ دیر بعد وہ دوبارہ دکان میں سینڈوچ کے پیسے دینے آئے۔

ایک ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے انہوں‌ نے کہا کہ میں نے سینڈوچ کے لیے تین منٹ انتظار کیا۔ اس دوران وہاں پر موجود تین ملازم آپس میں‌ باتیں‌ کرتے رہے. انہوں‌ نے میری طرف کوئی توجہ نہیں دی۔ وہاں پر مانیٹرنگ کے لیے کیمرے بھی لگے ہوئے تھے، کسی نے ان کی طرف بھی توجہ نہیں کی اور نہ ہی مجھے سینڈوچ کے پیسے دیے بغیر وہاں سے نکلنے سے روکنا۔

کراسیٹچ نے یہ واقعہ دوسرے ارکان پارلیمنٹ کو بھی سنایا جو یہ سب کچھ سن کر ہنس پڑے۔ تاہم سینڈوچ چوری کرنے پر سیاسی حلقوں میں تنقید کے بعد انہوں نے رضاکارانہ طور پر استعفیٰ دے دیا۔