پیرس: زرد صدری تحریک کے مظاہرے میں فرانسیسی پولیس کا العربیہ کے بیورو چیف پر حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں سکیورٹی فورسز نے زرد صدری تحریک کے احتجاجی مظاہرے کے دوران میں العربیہ نیوز چینل کے بیورو چیف حسین قنیبر پر حملہ کردیا ہے۔

حسین اتوار کو پیرس میں احتجاجی مظاہرے کی براہ راست کوریج کررہے تھے۔وہ اس وقت العربیہ کی پیش کار نجویٰ قاسم سے اسٹوڈیو میں گفتگو کررہے تھے اور انھیں تفصیل سے آگاہ کررہے تھے۔اس دوران میں سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے دھاوا بول دیا اور انھوں نے درمیان میں آنے والی العربیہ کی ٹیم کو دھکے دے کر پیچھے دھکیل دیا۔

حسین تب اپنی براہِ راست رپورٹ میں بتا رہے تھےکہ پولیس انھیں فلم بنانے سے روک رہی ہے۔انھوں نے خود پر حملہ کرنے والے پولیس اہلکار سے فرانسیسی زبان میں بھی گفتگو کی اور اس کا کہا کہ ’’ ہمیں نشانہ نہ بناؤ، ہمیں اپنا پیشہ ورانہ کام کرنے کا حق حاصل ہے‘‘۔

اس دوران میں ایک پولیس اہلکار کیمرے کے سامنے نمودار ہوا اور وہ بڑے جارحانہ انداز میں حسین قنیبر کو دھکے دیتے ہوئے پیچھے لے گیا اور چلاّیا :’’ پیچھے ہٹ جاؤ‘‘ جبکہ العربیہ کے بیورو چیف سکیورٹی اہلکاروں کو اپنی پیشہ ورانہ ذمے داریوں کی انجام دہی کا بتاتے ہی رہ گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں