حزب اللہ نے تنظیم کو 'دہشت گرد' قرار دینے کا برطانوی فیصلہ مسترد کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ نے تنظیم کو دہشت گرد قرار دینے سے متعلق برطانوی فیصلہ مسترد کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جمعرات کو برطانوی حکومت نے حزب اللہ کی مملکت میں سرگرمیوں پر پابندی عاید کرتے ہوئے تنظیم کو بلیک لسٹ کردیا تھا۔ برطانیہ کی جانب سے حزب اللہ کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا اعلان اہمیت کا حامل ہے۔ برطانوی حکومت نے نہ صرف حزب اللہ کے عسکری ونگ پر پابندی عاید کی ہے بلکہ حزب اللہ کے سیاسی شعبے پربھی پابندیاں عاید کی ہیں۔

برطانوی وزیر داخلہ ساجد جاوید نے ایک بیان میں کہا کہ حزب اللہ مشرق وسطیٰ میں عدم استحکام پیدا کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ اس لیے اس پر پابندی عاید کی جا رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم حزب اللہ کے عسکری اور سیاسی ونگ کو الگ الگ نہیں سمجھتے بلکہ دونوں ایک ہی گروپ کا حصہ ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حزب اللہ پر مکمل طورپرپابندی عاید کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ برطانیہ کی حکومت نے سنہ 2001ء اور 2008ء میں حزب اللہ کے عسکری ونگ کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد اس پر پابندی عاید کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں