.

تربیت یافتہ شاہین اپنے'پیرا گلائیڈر' مالک کے ہمراہ محو پرواز:وڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تربیت یافتہ شاہین کو بعض لوگ شکار کے لیے استعمال کرتے ہیں مگرچلی میں شاہین کے ایک شوقین نے پیراگلائیڈنگ کے دوران شاہین کو اپنے ساتھ محو پرواز کرکے پرندے سے دوستی کامنفرد ثبوت دیا ہے۔تربیت یافتہ شاہین مالک کی پیرا گلائیڈنگ کے دوران اس کے ساتھ ساتھ ا اڑتے دیکھا جا سکتا ہے۔ شاہین اور اس کے مالک کے فضاء میں ایک ساتھ پرواز دونوں کے درمیان باہمی ربط اور تعلق کا پتا دیتی ہے۔

خبر رساں اداروں کےمطابق 37 سالہ اربیل مارینکوفیٹچ کو شاہین پالنے کا بچپن سے شوق تھا۔ اس وقت اس کے پاس'باس ہاریس' نسل کا ایک شاہین ہے۔ یہ شاہین اس نے چھوٹی عمر میں لے لیا تھا۔ وہ ہر ہفتے شاہین کو ساتھ رکھتا ہے اور پہاڑ کی چوٹی پر جا کرپیرا گلائیڈنگ کرتے ہوئے بھی پراز میں اپنے ساتھ اڑتا ہے۔

مارینکو فٹیچ پیشے کے اعتبار سے پیشہ ور صحافی ہے۔ اس کے شاہین دوست پرندے کو بھی اس پر بہت زیادہ اعتبار ہے۔ وہ اسے بوسہ بھی دیتا۔ اس لیے نہیں کہ اس کے ساتھ اسے پیار ہے بلکہ اس لیے بھی کہ اس کےہاتھ سے شاہین کو کبھی تکلیف نہیں پہنچی۔

فضاء میں اڑتے ہوئے وہ کبھی اپنے مالک کے ساتھ ساتھ اڑتا ہےاور کبھی اس کے کندے پر بیٹھ جاتا ہے۔
اگر شاہین کے مالک کے چھاتے چھاتے دوسرے مہم جوئوں‌کے چھاتے ہوں تو کبھی شاہین بھول بھی جاتا ہے مگر وہ جلد ہی مالک کو تلاش کرلیتا ہے۔

مارینکوفیٹچ تازہ گوشت کا ایک ٹکڑا بھی اپنے پاس رکھتا ہے اور حسب موقع اور ضرورت کے مطابق وہ شاہین کو کھلاتابھی رہتا یے۔

چلی کے فوٹو گرافر نے پیرا گلائیڈنگ کی مہم کا آغاز تین سال پیشتر کیا۔ یہ اس کا بچپن کا خواب تھا جب کہ شاہین پالنا بھی اس کا مشغلہ ہے۔اس کا کہنا ہے کہ اس طرح وہ فطرت کی رنگینیوں‌کو زیادہ بہتر انداز میں دیکھ سکتا ہے۔

فضاء میں اڑان اور شاہین کی تربیت کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں مارینکوفیٹچ کا کہنا تھا کہ پہلے پہل وہ جلدی تھک جاتا تھا مگر تیزی کے ساتھ اس کا اعتماد بڑھتا گیا۔ وہ جان گیا کہ چھاتے کو ہوا کے رخ پرکیسے موڑنا اور ہوا کے رخ پر کتنا اڑانا ہے۔