سعودی عرب: سمندر پار سے تعلق رکھنےو الے سیاحوں کو ویزا فری رسائی دینے پر غور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب نے اپنی معیشت کو متنوع بنانے کی غرض سے غیر مذہبی سیاحت کو فروغ دینے کے لیے غیرملکی سیاحوں کو ویزا فری رسائی دینے پر غور شروع کردیا ہے۔

حکام کے مطابق یہ مجوزہ منصوبہ ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے ،اس کو آیندہ مہینوں میں حتمی شکل دی جائے گی اور اس سال کے آخر تک اس ویز ا فری نظام کو متعارف کرادیا جائے گا ۔

وال اسٹریٹ جرنل کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب غیرملکی سیاحوں کے لیے سیاحتی پابندیاں نرم کردے گا اور امریکا ، یورپ ، جاپان اور چین سے تعلق رکھنے والے زائرین کو ویزا فری رسائی دی جائے گی یا پھر انھیں سعودی عرب آمد پر ویزا جاری کردیا جائے گا۔

اس وقت دنیا بھر سے تعلق رکھنےو الے مسلمان حج اور عمرے کے لیے سارا سال سعودی عرب آتے رہتے ہیں لیکن اب مملکت نے اپنی معیشت کو مضبوط بنانے کے لیے ترقی یافتہ ممالک سے تعلق رکھنے والے سیاحوں کو بھی تاریخی مقامات اور آثار کی سیر کے لیے ویزے جاری کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔

سعودی عرب کی کابینہ نے گذشتہ جمعرات کو سمندر پار زائرین کو برقی سیاحتی ویزے جاری کرنے کی منظوری دی تھی۔ایسے زائرین کو سعودی عرب میں کھیلوں کے مقابلوں اور کنسرٹس میں شرکت کے لیے یہ برقی سیاحتی ویزے جاری کیے جائیں گے۔

سعودی حکام کے مطابق اس اقدام کے تحت ویزے کے لیے درخواست آن لائن مکمل کی جائے گی۔اس میں چند منٹ صرف ہوں گے اور انھیں اپنے ملک میں سعودی سفارت خانے یا قونصل خانے میں جانے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں قریباً چار عشرے کے بعد پہلی مرتبہ گذشتہ سال سینما گھر کھولے گئے ہیں اور اس کے بعد کھیلوں کے بین الاقوامی مقابلوں اور موسیقی کے کنسرٹس کا انعقاد کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں