امریکی دھمکی مسترد، ترکی روس سے فضائی دفاعی نظام کی خریداری پر ڈٹ گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے امریکا کی طرف سے روسی فضائی دفاعی نظام 'ایس 400' کی خریداری کی کوششوں پر دھمکی اور دبائو مسترد کردیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ انقرہ روس سے فضائی دفاعی نظام'ایس 400' کی خریداری کے فیصلے سےپیچھےنہیں ہٹے گا۔ اس کے بعد اگلے مرحلے میں‌ترکی روس سے 'ایس 500' دفاعی نظام خریدنے پر بھی غور کرے گا۔

خیال رہے کہ امریکا نے ترکی کو خبردار کیا ہے کہ اگر اس نے روس سے اس کا تیار کردہ 'ایس 400' دفاعی نظام خرید کیا تو واشنگٹن انقرہ کے ساتھ'ایف 35' طیاروں کی تیاری کا معاہدہ منسوخ کردے گا۔ امریکا کا کہنا ہے کہ 'روس کا 'ایس 400' دفاعی نظام نیٹو کے رکن ممالک کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔

امریکا کے اس دھمکی آمیز بیان کے جواب میں ترک صدر جب طیب ایردوآن نےکہا کہ امریکا ترکی کو تجارتی اقدامات کےذریعے سبق نہ پڑھائے۔ ترکی کے اپنے تیار کردہ تجارتی اور دفاعی منصوبے ہیں۔

شام کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ترک صدر نے کہا کہ شمالی شام میں سیف زون کے قیام کی نگرانی کسی دوسرے ملک کو دینے کی تجویز قبول نہیں کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں