.

شکست کے باوجود 'داعش' خطرناک نسل تیار کرسکتی ہے:امریکی جنرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مشرق وسطیٰ کے لیے امریکی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل جوزف فوٹیل نے خبردار کیا ہے کہ شام میں آخری محاذ پر شکست کے باوجود'داعش' کا خطرہ ختم نہیں ہوا ہے۔ یہ گروپ منتشر ہونے کے باوجود انتہا پسندوں کی خطرناک نسل کی نمائندگی کرتا ہے اور مستقبل میں دہشت گردی کی ایک خطرناک نسل تشکیل دے سکتا ہے۔

جنرل جوزف نے امریکی سینٹ کی ایک کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ داعش کے خطرے کے حقیقی انسداد کے لیے داعش کے نظریات سے درست طریقے سے نمٹنا ہوگا۔ اگر اس کے نظریات سے نہ نمٹا گیا تو مستقبل میں یہ گروپ تشدد پسند انتہا پسندی کے بیج بو سکتا ہے۔

امریکی فوجی عہدیدار کا کہنا تھا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے یہ دعویٰ کرنا کہ داعش شام اور عراق میں اپنے زیرتسلط 100 فی صد علاقوں سے محروم ہوچکی ہے درست ہے مگر اس تنظیم کو مکمل شکست نہیں دی جاسکتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ داعش کے پاس

اب ایک مربع میل سے زیادہ کا علاقہ نہیں رہا ہے مگر وہ زمین کے اس چھوٹے سے ٹکڑے میں کئی ہفتوں سے موجود ہے اور اب اس کے جنگجو بھاگ کر چھپنے کی کوشش کررہے ہیں۔