.

مسلمان مخالف آسٹریلوی سینیٹر کی نوجوان نے انڈوں سے ’’تواضع‘‘ کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کرائسٹ چرچ حملے کے بعد مسلمانوں کے خلاف زہر اگلنے والے آسٹریلوی سینیٹر فریزر ایننگ پر میڈیا سے بات کے دوران انڈے پڑ گئے۔ جھینپ مٹانے کیلئے آسٹریلوی سینیٹر بچے کو تھپڑ اور لاتیں مارتا رہا۔

آسٹریلوی سینیٹر فریزر ایننگ نے حملوں کا ذمہ دار مسلمانوں کو قرار دیا تھا۔ فریزر ایننگ نے دہشت گردی کے بعد ٹویٹر پر لکھا تھا کہ یہ حملہ دراصل آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے عوام میں بڑھتی ہوئی مسلم آبادی کے خوف کا واضح نتیجہ ہے۔

آسٹریلوی وزیراعظم نے ان کے بیان پر سخت ناراضی کا اظہار کیا تھا۔ آسٹریلوی عوام بھی مشتعل ہے۔ فریزر ایننگ میڈیا سے بات کر رہے تھے جب ایک لڑکے نے ان کے سر پر انڈا دے مارا۔ فریزر ایننگ نے جھینپ مٹانے کیلئے لڑکے کو تھپڑ دے مارا۔