برطانیہ میں پانچ مساجد پر ہتھوڑے سے حملے ، ملزم نے کھڑکیوں کے شیشے توڑ دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانیہ میں محکمہ انسدادِ دہشت گردی کے حکام وسطی شہر برمنگھم میں پانچ مساجد پر حملوں کی تحقیقات کررہے ہیں۔کسی نامعلوم حملہ آور نے ہتھوڑے سے ان مساجد کی کھڑکیوں کے شیشے توڑ دیے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ان تمام حملوں کا آپس میں تعلق ہے لیکن ابھی ان کے محرک کا پتا نہیں چل سکا۔برمنگھم میں یہ واقعات نیوزی لینڈ کے شہر کرائس چرچ میں گذشتہ جمعہ کو دو مساجد میں ایک آسٹریلوی دہشت گرد کی فائرنگ سے پچاس مسلمانوں کی شہادت کے واقعے کے چھے روز بعد پیش آئے ہیں۔اس اندوہ ناک واقعے کے بعد برطانیہ میں بہت سے لیڈروں نے مسلم کمیو نٹی کی سرکردہ شخصیات سے رابطے کیے تھے اور انھیں اپنی حمایت کی یقین دہانی کرائی تھی۔

برطانوی وزیر داخلہ ساجد جاوید نے کہا ہے کہ برمنگھم میں حملے بہت ہی تشویش ناک ہیں۔انھوں نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ’’ ہمارے معاشرے میں قابلِ نفرین کردار کی کوئی جگہ نہیں ہے اور اس کو کبھی قبول نہیں کیا جائے گا‘‘۔

برمنگھم کی شہری کونسل کی کابینہ کے رکن وسیم ظفر نے ٹویٹر پر لکھا ہے کہ ’’کمیونٹی کسی بھی نفرت اور تقسیم کا محبت ، امن اور ہم آہنگی سے جواب دے گی‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں