نیوزی لینڈ : مساجد پر حملوں میں شہید تمام افراد کی شناخت مکمل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

نیوزی لینڈ میں پولیس نے اعلان کیا ہے کہ گزشتہ جمعے کے روز کرائسٹ چرچ شہر کی دو مساجد پر دہشت گرد حملے میں جاں بحق ہونے والے تمام پچاس افراد کی شناخت ہو گئی ہے۔ اب ان افراد کی تدفین ہو سکے گی۔

جمعرات کے روز پولیس کمشنر مائیک بش نے بتایا کہ حملوں میں قتل کر دیے جانے والے تمام پچاس افراد کی شناخت مکمل ہو چکی ہے اور تمام خاندانوں کو مطلع کر دیا گیا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ "یہ اس کارروائی کا ٹرننگ پوائنٹ ہے"۔

سفید فام نسل پرست آسٹریلوی برینٹن ٹیرینٹ (28 سالہ) کو 50 افراد کو ہلاک اور درجنوں کو زخمی کرنے کا ذمے دار ٹھہرایا گیا ہے۔ یہ تمام افراد کرائسٹ چرچ کی دو مساجد "النور" اور "لِنووڈ" میں نماز جمعہ ادا کر رہے تھے۔ ٹیرینٹ نے اس وحشیانہ کارروائی کو براہ راست سوشل میڈیا پر بھی نشر کیا۔

برینٹن ٹیرینٹ کی جانب سے سوشل میڈیا کی معاونت حاصل کرنا ،،، شدت پسندوں کی جانب سے ان پلیٹ فارموں کے استعمال پر روشنی ڈالتا ہے۔ نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جاسینڈا آرڈرن نے بدھ کے روز مطالبہ کیا کہ اس رجحان پر روک لگانے کے لیے ایک "یکساں محاذ" تشکیل دیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں