.

کینیڈا: مانٹریال کے ایک چرچ میں دعائیہ تقریب کے دوران پادری پر چاقو سے حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کینیڈا کے شہر مانٹریال میں جمعہ کے روز ایک سفید فام شخص نے ایک چرچ ہونے والی دعائیہ تقریب کے دوران پادری پر حملہ کر دیا۔ پولیس اور سیکیورٹی عملے نے حملہ آور کو حراست میں لے لیا ہے۔

مانٹریال کی پولیس ترجمان کیرولن شیفرویز نے بتایا ک پولیس نے چرچ میں پادری پر چاقو سے حملہ کرنے والے مشتبہ شخص کو گرفتار کرنے کے بعد تفتیش کے لیے متعلقہ حکام کے حوالے کر دیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ چرچ میں دعائیہ تقریب کے دوران چاقو کے حملے سے پادری معمولی زخمی ہوا ہے۔ اسے اسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں اس کی حالت خطرے سے باہر بیان کی جاتی ہے۔

پولیس کی ترجمان نے عینی شاہدین کے بیانات کے حوالے سے بتایا کہ پادری گرجا گھر میں مذہبی رسومات کی انجام دہی میں مصروف تھا کہ اچانک ایک شخص اس کی طرح بڑھا اور چاقو سے حملہ کر کے اسے زخمی کردیا۔

ادھر کیتھولک چرچ کی ترجمان سیلین باربو نے بتایا کہ جس گرجا گھرمیں پادری کو زخمی کیا گیا وہ کینیڈا کے اہم ترین گرجا گھروں میں سے ایک ہے جب کہ زخمی ہونے والے پادری کی شناخت پوپ کلود گرو کے نام سے کی گئی ہے۔ اس واقعے کے دوران چرچ میں 50 افراد موجود تھے۔

یہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے آٹھ بجے پیش آیا اور اس کی ایک فوٹیج بھی سوشل میڈیا پر فورا پوسٹ کردی گئی تھی۔ پولیس نے چرچ میں حملے کی خبر ملتے ہی علاقے کو گھیرے میں لے کر ملزم کو گرفتار کرلیا۔ کینیڈا ریڈیو کے مطابق پادر پرحملہ آور شخص سفید فام اور طویل القامت شخص ہے۔ اس کی مزید شناخت سامنے نہیں لائی گئی۔