ٹرمپ کا 'داعشی خلافت' کے خاتمے کا خیر مقدم مگر چوکنا رہنے پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شدت پسند تنظیم'داعش' کی مزعومہ خلافت کے خاتمے کا خیرمقدم کیا ہے مگر ساتھ ہی کہا ہے کہ ہمیں 'داعش' کے حوالے سے بیدار اور چوکنا رہنا ہوگا تاکہ یہ خطرناک گروپ دوبارہ سر نہ اٹھا سکے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اپنے ایک بیان میں امرکی صدر نے کہا کہ دہشت گردوں اور انتہاپسندوں کو ختم کرنے کے لیے امریکا اپنےاتحادیوں کے ساتھ مل کر کام کرتا رہے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ اچھی بات ہے کہ 'داعش' کی خلافت ختم ہوگئی ہے مگر امریکا اور دوسرے ملکوں کو داعش کے حوالے سے بیدار رہنا ہوگا۔

خیال رہےکہ شام میں امریکی حمایت یافتہ کرد فورسز نے ہفتے کے روز اعلان کیا تھا کہ مشرقی شام میں الباغوز کے مقام پر داعش کو شکست دے دی گئی ہے جس کے بعد شام اور عراق میں 'داعش' کی خود ساختہ خلافت کو ختم کردیا گیا ہے۔

الباغوز شام میں 'داعش' کا آخری مضبوط گڑھ تھا جس میں شدت پسندوں کے خلاف آپریشن چند ہفتے قبل شروع کیا گیا تھا۔۔
سیرین ڈیموکریٹک فورسز کے ترجمان مصطفیٰ بالی نے "ٹویٹر" پر ایک بیان میں کہا کہ الباغوز کو آزاد کرالیا گیا ہے اور داعش کے خلاف فوجی کارروائی کامیاب ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمعہ کے روز ایک بیان میں کہا تھا کہ شام میں داعش کو 100 فی صد شکست سے دوچارکردیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں