.

برطانیہ : بریگزٹ ڈیل پر ووٹنگ کے سبب 3 وزراء مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ میں بریگزٹ ڈیل کے حوالے سے پارلیمنٹ میں ووٹنگ پر 3 وزراء مستعفی ہو گئے ہیں۔

مستعفی ہونے والوں میں وزیر مملکت برائے صنعتی امور رچرڈ ہیرنگٹن، وزیر مملکت برائے خارجہ امور ایلسٹر برٹ اور وزیر مملکت برائے صحت اسٹیو برائن شامل ہیں۔

دوسری جانب پیر کے روز برطانوی پارلیمںٹ میں ووٹنگ کے ذریعے بریگزٹ کے معاملے پر حکومتی اختیارات کے حوالے سے ووٹنگ ہوئی۔ ووٹنگ کے نتیجے میں ترمیم کے ذریعے بریگزٹ کے معاملے میں ارکان پارلیمنٹ کو زیادہ بڑا کردار حاصل ہو گیا ہے۔ یہ وزیراعظم تھریزا مے کی حکومت کے لیے ایک اور شدید دھچکا ہے۔

مذکورہ ترمیم کو 302 کے مقابلے میں 329 ووٹوں سے منظور کر لیا گیا۔ اس ترمیم کے ذریعے اب ارکان پارلیمنٹ کے پاس موقع ہو گا کہ وہ بدھ کے روز بریگزٹ کے حوالے سے ممکنہ آپشنز کے سلسلے میں رائے شماری کی کارروائی کریں۔ ان آپشنز میں متحدہ منڈی میں باقی رہنا یا نیا ریفرینڈم کرانا اور یا پھر بریگزٹ ڈیل کو مکمل طور پر منسوخ کر کے یورپی یونین میں باقی رہنا شامل ہے۔

بریگزٹ ڈیل سے متعلق وزارت نے نئی ترمیم کے سلسلے میں ہونے والی ووٹنگ کی فوری طور پر مذمت کی اور اسے ایک خطرناک پیش رفت قرار دیا جس کے نتائج کے بارے میں قیاس آرائی ممکن نہیں۔ وزارت کی جانب سے جاری بیان میں اس ووٹنگ پر مایوسی کا اظہار کیا گیا ہے اور زور دیا گیا ہے کہ جس آپشن پر بھی غور کیا جائے وہ یورپی یونین کے ساتھ مذاکرات میں قابل عمل ہو۔