لندن:مسجد کے قریب ایک شخص کے قتل کی وجہ بیش قیمت گھڑی نکلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی پولیس کا کہنا ہے کہ گذشتہ جمعرات کو لندن کی ایک مسجد میں ایک شخص کی ہلاکت میں دہشت گردی کا عنصر نہیں ملا تاہم اس واقعے کی وجہ ایک بیش قیمت گھڑی معلوم ہوتی ہے جس کی قیمت 80 ہزار امریکی ڈالر کے برابربتائی جاتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌کے مطابق لندن پولیس کا کہنا ہے کہ دارالحکومت میں شاہراہ کے قریب 700 میٹر کے فاصلے پر واقع مسجد ریجنٹ پارک میں جس شخص کو شدید زخمی حالت میں اٹھایا گیا اس کی شناخت چیچن باشندے کے طورپر کی گئی ہے جس کا نام ظہیر وزییٹر کےسامنے آیا ہے۔

اسکاٹ لینڈ یارڈ پولیس کا کہنا ہے کہ 25 سالہ چیچن ظہیر کوچاقو سے نشانہ بنایا گیا۔ اس واقعے میں دہشت گردی کا عنصر معلوم نہیں ہوتا البتہ پولیس کو پتا چلا ہے کہ اس واقعے میں ایک گھڑی سامنے آئی ہے جس کی مالیت 80 ہزار امریکی ڈالرکے برابر ہے۔

طبی عملے اور پولیس نے زخمی ہونے والے چیچن باشندے کی جان بچانے کی پوری کوشش کی مگر بہت زیادہ خون بہہ جانے کے باعث اس کی موت واقع ہوگئی۔ میٹرو پولیٹن پولیس کی ویب سائیٹ پر اس واقعے کے بارے میں 104 الفاظ پر مشتمل ایک بیان شائع کیا گیا ہے۔

پولیس نے لندن کی مرکزی مسجد کو گذشتہ جمعرات کو اس وقت بند کریا تھا جب دو مشتبہ افراد بھاگ کر اس مسجد میں جا گھسے تھے۔ ملزمان ایک شخص کو قتل کرنے کے بعد نمازیون میں جا گھسے اور جوبعد ازاں وہاں سے فرار ہوگئے تھے۔ ان کی تلاش اور گرفتاری کے لیے پولیس مسلسل چھاپے مار رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں