.

حسن البنا کے پوتے کو قطر کی جانب سے سالانہ 35 ہزار یورو کی ادائیگی کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی حکومت نے انکشاف کیا ہے کہ قطر کی جانب سے اخوان المسلمون کے بانی حسن البنا کے پوتے پروفیسر طارق رمضان کو ماہانہ خطیر رقم فراہم کی جاتی ہے جس کی مدد سے وہ سوئٹزرلینڈ اور دوسرے ملکوں میں اخوان کے منصوبوں کو آگے بڑھا رہے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق فرانسیسی حکومت کی مانیٹرنگ کمیٹی کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ کی تفصیلات Tracfin ایجنسی نے شائع کی ہیں۔ فرانسیسی وزارت اقتصادیات ومالیات کے زیر انتظام یہ ایجنسی منی لانڈرنگ اوردہشت گردی کے لیے کی جانے والی فنڈنگ کے حوالے سے تفصیلات شائع کرتی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزامات کا سامنا کرنے والے طارق رمضان قطری حکومت کے لیے مشیر کی خدمات بھی انجام دیتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ قطر فائونڈیشن انہیں ہر ماہ خطیر رقم فراہم کرتی ہے۔

فرانسیسی اخبار 'لیبراسیون' کے مطابق قطر فائونڈیشن نے طارق رمضان کو دوحہ لانے اور ان سے استفادہ کرنے کی سہولت مہیا کی اور ان کی خدمات کے حصول میں اخوان کے روحانی پیشوا یوسف القرضاوی نے بھی مدد فراہم کی۔

فرانسیسی تحقیقات کے مطابق طارق رمضان کو یکم جون 2017ء کو قطر کی طرف سے پانچ لاکھ 90 ہزار ڈالر منتقل کیے گئے۔ اس رقم سے 28 جولائی 2017ء کو انہوں‌ نے پیرس کے شمال میں دو منزلہ فلیٹ خرید کیا۔ اس کے علاوہ دیگر رقم طارق رمضان کی دو تنظیموں Juste Cause اور Horizons کے مقاصد کے لیے استعمال کی گئی۔